میر پور ٹیسٹ میں بنگلہ دیش کا ہدف 550 رنز

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بنگلہ دیش کو یہ میچ جیتنے کے لیے مزید 487 رنز کی ضرورت ہے اور دوسری اننگز میں اس کی نو وکٹیں باقی ہیں

میرپور میں کھیلے جانے والے دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر بنگلہ دیش نے پاکستان کے خلاف دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 63 رنز بنا لیے ہیں۔

بنگلہ دیش کو یہ میچ جیتنے کے لیے مزید 487 رنز کی ضرورت ہے اور دوسری اننگز میں اس کی نو وکٹیں باقی ہیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

بنگلہ دیش کی جانب سے تمیم اقبال اور امروالقیس نے دوسری اننگز کا آغاز کیا۔

بنگلہ دیش کو پہلا نقصان 48 رنز کے مجموعی سکور پر اس وقت اٹھانا پڑا جب امروالقیس 16 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، انھیں یاسر شاہ نے بولڈ کیا۔

اس سے پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن پاکستان نے 195 رنز چھ کھلاڑی آؤٹ پر اپنی دوسری اننگز ڈکلیئر کر کے بنگلہ دیش کو جیتنے کے لیے 550 رنز کا ہدف دیا تھا۔

جمعے کو دوسری اننگز میں محمد حفیظ اور سمیع اسلم نے اننگز کا آغاز کیا لیکن پاکستان کو پہلے ہی اوور میں محمد حفیظ کی وکٹ کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

وہ ایک بار پھر محمد شاہد کی باہر جاتی گیند پر وکٹ کیپر کو کیچ دے بیٹھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بنگلہ دیشی آل راؤنڈر شکیب الحسن نے جارحانہ انداز اپنایا اور شاہد علی کے ساتھ مل کر اہم شراکت قائم کی

پاکستان کی دوسری وکٹ 25 رنز کے سکور پر گری جب سمیع اسلم محمد شاہد کی دوسری وکٹ بنے۔

پہلی اننگز میں ڈبل سنچری بنانے والے اظہر علی اس بار 25 رنز ہی بنا پائے۔ انھیں سومیا سرکار نے آؤٹ کر کے اپنی پہلی ٹیسٹ وکٹ لی۔

چوتھی وکٹ کے لیے یونس اور مصباح میں 58 رنز کی شراکت ہوئی جسے تیج الاسلام نے یونس خان کو اپنی ہی گیند پر کیچ کر کے ختم کیا۔

پاکستان کی پانچویں وکٹ 140 رنز کے مجموعی سکور پر اس وقت گری جب اسد شفیق 15 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

بنگلہ دیش کی جانب سے دوسری اننگز میں محد شاہد نے دو جبکہ تیج الاسلام، سومیا سرکار اور شواگتا ہوم نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

شکیب کی محنت رائیگاں گئی

اس سے قبل جب کھیل شروع ہوا تو ابتدائی سیشن میں ہی پاکستانی بولرز نے مزید چار وکٹیں حاصل کر کے بنگلہ دیش کی اننگز 203 رنز پر ختم کر دی۔

پاکستان کو پہلی اننگز میں میزبان ٹیم پر 354 رنز کی برتری حاصل ہوئی لیکن پاکستان نے بنگلہ دیش کو فالو آن نہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

کھیل کے تیسرے دن آؤٹ ہونے والے پہلے بلے باز سومیا سرکار تھے جنھیں وہاب ریاض نے تین کے انفرادی سکور پر کیچ کروا دیا۔

وہاب نے ہی شواگتا ہوم کو پویلین کی راہ دکھائی اور جب محمد حفیظ نے تیج الاسلام کو آؤٹ کر کے پاکستان کو آٹھویں کامیابی دلوائی تو بنگلہ دیش کا سکور 140 رنز تھا۔

تاہم اس موقع پر دوسرے اینڈ پر موجود آل راؤنڈر شکیب الحسن نے جارحانہ انداز اپنایا اور شاہد علی کے ساتھ مل کر 63 رنز کی اہم شراکت قائم کی۔

اس شراکت کا خاتمہ یاسر شاہ نے شاہد کو آؤٹ کر کے کیا جبکہ شکیب 91 گیندوں پر 14 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 89 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

بنگلہ دیش کے آخری کھلاڑی شہادت حسین زخمی ہونے کی وجہ سے بلے بازی کے لیے میدان میں نہ آ سکے۔

پاکستان کی جانب سے یاسر شاہ اور وہاب ریاض نے تین، تین جنید خان نے دو جبکہ محمد حفیظ نے ایک وکٹ لی۔

پاکستان اس دورۂ بنگلہ دیش میں تاحال فتح کی تلاش میں ہے۔ بنگلہ دیش نے پہلے پاکستان کو تینوں ون ڈے میچوں اور پھر دورے کے واحد ٹی 20 انٹرنیشنل میچ میں بھی ہرایا تھا۔

دونوں ٹیموں کے درمیان کھلنا میں کھیلا گیا پہلا ٹیسٹ بھی بےنتیجہ رہا تھا اور یہ پہلا موقع تھا کہ بنگلہ دیشی ٹیم نو ٹیسٹ میچوں میں پاکستان سے نہیں ہاری۔

اسی بارے میں