بائرن سے شکست کے باوجود بارسلونا فائنل میں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بارسلونا کی ٹیم 2006، 2009 اور 2011 میں گذشتہ تین مواقع پر جب بھی چیمپیئنز لیگ کے فائنل میں پہنچی فتح یاب رہی ہے

ہسپانوی فٹبال کلب بارسلونا کی ٹیم چار برس کے وقفے کے بعد یورپی چیمپئنز لیگ مقابلوں کے فائنل میں پہنچنے میں کامیاب رہی ہے۔

بارسلونا کو منگل کو جرمنی میں بائرن میونخ کے خلاف سیمی فائنل کے دوسرے مرحلے میں شکست ہوئی لیکن وہ دونوں مراحل میں زیادہ گول کرنے کی بنیاد پر فائنل میں پہنچی۔

یہ 2011 کے بعد پہلا موقع ہے کہ بارسلونا چیمپیئنز لیگ کا فائنل کھیلے گی۔

چھ جون کو برلن میں ہونے والے فائنل میں اس کا مقابلہ روایتی حریف اور دفاعی چیمپیئن ریال میڈرڈ یا اطالوی کلب یووینٹس سے ہوگا جو بدھ کو دوسرے سیمی فائنل میں مدِمقابل ہوں گے۔

میونخ میں منگل کی شب کھیلے جانے والے میچ میں مقامی سائیڈ بائرن میونخ نے دو کے مقابلے میں تین گول سے فتح پائی لیکن پہلی لیگ میں تین صفر کی شکست کی وجہ سے وہ گولوں کے فرق پر ٹورنامنٹ سے باہر ہوگئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption نیمار نے 29 ویں منٹ میں ایک اور گول کر کے بارسلونا کو برتری دلوا دی جو پہلے ہاف کے اختتام تک قائم رہی

بائرن کی جانب سے پہلا گول میدہی بیناتیا نے میچ کے ساتویں منٹ میں کر دیا تاہم آٹھ منٹ بعد ہی بارسلونا کے برازیلی سٹرائیکر نیمار نے لوئی سواریز کے پاس پر گول کر کے میچ برابر کر دیا۔

نیمار نے 29 ویں منٹ میں ایک اور گول کر کے بارسلونا کو برتری دلوا دی جو پہلے ہاف کے اختتام تک قائم رہی۔

دوسرے ہاف میں بائرن کی جانب سے رابرٹ لیوندوسکی اور ٹامس ملر نے مزید دو گول کیے اور اپنی ٹیم کو میچ میں فتح تو دلوا دی لیکن اسے فائنل تک پہنچانے میں ناکام رہے۔

بارسلونا کی ٹیم 2006، 2009 اور 2011 میں گذشتہ تین مواقع پر جب بھی چیمپیئنز لیگ کے فائنل میں پہنچی فتح یاب رہی ہے۔

2015 میں بارسلونا ہسپانوی فٹبال کے دو مرکزی ٹورنامنٹس لا لیگا اور کوپا ڈیل رے جیت چکی ہے اور چیمپیئنز لیگ میں فتح کی صورت میں ’ٹریبل‘ مکمل کرنے میں کامیاب رہے گی۔

اسی بارے میں