آئی سی سی کے صدر کے لیے ظہیرعباس کے نام کی منظوری

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ایشین بریڈمین کےنام سے پہچانے جانے والے ظہیر عباس نے78 ٹیسٹ میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کر چکے ہیں

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق ٹیسٹ کرکٹر ظہیر عباس کو آئی سی سی کی صدارت کے لیے نامزد کرنے کی منظوری دے دی ہے۔

اس سلسلے میں گورننگ بورڈ کی رسمی منظوری کے بعد ان کا نام آئی سی سی کو بھیج دیا جائےگا۔

آئی سی سی کے طریقہ کار کے تحت ان کا نام آئی سی سی کی نامزدگی سے متعلق کمیٹی کے پاس جائےگا جس کی منظوری کے بعد اسے آئی سی سی کے بورڈ اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ یہ نامزدگی نجم سیٹھی کی جگہ عمل میں آئی ہے جنھوں نے پیر کے روز آئی سی سی کی صدارت سے دستبردار ہونے کا فیصلہ کر لیا تھا۔

نجم سیٹھی نے دستبردار ہونے کی وجہ یہ بتائی تھی کہ وہ اس عہدے پر کسی سابق ٹیسٹ کرکٹر کو فائز دیکھنا چاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ آئی سی سی نے کہا ہے کہ آئندہ سال سے اس کا صدر کوئی سابق ٹیسٹ کرکٹر ہو گا۔

آئی سی سی کے آئین میں ترمیم کے بعد صدر کا عہدہ رسمی رہ گیا ہے اور تمام تر اختیارات چیئرمین کے پاس چلےگئے ہیں۔

67 سالہ ظہیرعباس 78 ٹیسٹ اور 62 ون ڈے انٹرنیشنل میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کر چکے ہیں۔

وہ فرسٹ کلاس کرکٹ میں سو سے زائد سنچریاں سکور کرنے والے واحد پاکستانی بیٹسمین ہیں۔

ظہیرعباس 1993 میں آئی سی سی کے میچ ریفری بھی رہ چکے ہیں۔ انھوں نے مختلف حیثیتوں میں پاکستان کرکٹ بورڈ میں بھی ذمہ داریاں نبھائی ہیں۔

اسی بارے میں