پاکستانی فٹبالر کلیم اللہ امریکی کلب میں شامل

تصویر کے کاپی رائٹ SACRAMENTO
Image caption کلیم اللہ پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے شہر چمن میں پیدا ہوئے

امریکی فٹ بال کلب سیکرامینٹو رپبلک کلب نے اعلان کیا ہے کہ اس نے پاکستان کی قومی فٹبال ٹیم کے کپتان کلیم اللہ کو سائن کر لیا ہے۔

سان فرانسسکو کے فٹبال کلب سیکرامینٹو رپبلک کلب کی ویب سائٹ کے مطابق کلیم اللہ پہلے پاکستانی فٹ بال کھلاڑی ہیں جن کو کسی امریکی فٹ بال کلب نے اپنی ٹیم کے لیے سائن کیا ہے۔

پاکستانی فٹبال کی تاریخ کے مہنگے ترین کھلاڑی

سیکرامینٹو رپبلک کلب کے ٹیکنیکل ڈائریکٹر گریم سمتھ کا کہنا ہے ’کلیم اللہ کو سائن کرنے سے ہمارے اس مشن کا اعادہ ہوتا ہے کہ ہم دنیا بھر سے بہترین کھلاڑی ٹیم میں شامل کر رہے ہیں۔‘

ان کا مزید کہنا تھا: ’کلیم اللہ کے گول کرنے کی صلاحیت کا تو سب کو ہی پتہ ہے۔ لیکن کلیم اللہ کو امریکہ میں فٹبال کھیلنے کے سٹائل اور پریکی کے کوچنگ سٹائل کو سیکھنے میں کچھ وقت لگے گا۔‘

کلیم اللہ کو یہ کنٹریکٹ کلب میں ایک ماہ کی تربیت کے بعد ملا ہے۔

پچھلا سیزن کلیم اللہ نے کرغیزستان کے کلب ڈورڈئی کی جانب سے کھیلا تھا۔

ڈورڈئی کی جانب سے کلیم اللہ نے 17 میچ کھیلے اور اس کلب نے شورو ٹاپ لیگ ٹائٹل جیتا تھا۔

کلیم اللہ کو گولڈن بُوٹ اور ایم وی پی ایوارڈ ملا تھا۔ انھوں نے 2014 کے سیزن میں 18 گول کیے تھے۔

کرغیزستان کے کلب سے قبل کلیم اللہ نے پاکستان پریمیئر لیگ کے پانچ سیزنز میں 94 میچوں میں حصہ لیا اور 72 گول کیے۔

پاکستان پریمیئر لیگ 2013 میں 31 گول کرنے اور سات ہیٹ ٹرکس کرنے پر ان کو گولڈن بوٹ کا ایوارڈ ملا تھا۔

کلیم اللہ سنہ 2014 میں پاکستان کی قومی فٹبال ٹیم کے کپتان بنے تھے۔ پاکستان کی جانب سے کلیم اللہ نے 2011 سے 25 میچ کھیلے ہیں اور چار گول کیے ہیں۔

سیکرامینٹو رپبلک کلب میں کلیم اللہ کی شمولیت کے بعد اس ٹیم میں غیر ملکی کھلاڑیوں کی تعداد 12 ہو گئی ہے۔

اسی بارے میں