بھارتی خفیہ ادارے ’را‘ نے دھمکی دی تھی: صوبائی وزیر

Image caption صوبائی وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ را تحریک طالبان کے ساتھ مل کر پاکستان میں دہشت گردی کروا رہی ہے

وزیر داخلہ پنجاب کرنل ریٹائرڈ شجاع خانزادہ کا کہنا ہے کہ زمبابوے کرکٹ ٹیم کو پاکستان آمد سے قبل دھمکی آمیز پیغام بھیجا گیا تھاجس کو مقصد دونوں ممالک کے درمیان ہونے والی کرکٹ سیریز کو منسوخ کرنا تھا۔

یہ بات اُنھوں نے منگل کو پنجاب اسمبلی میں اپنی تقریر کے دوران بتائی۔

بعدازاں اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شجاع خانزادہ کا کہنا تھا کہ زمبابوے کرکٹ ٹیم جب دورۂ پاکستان کے لیے دبئی سے لاہور کے لیے روانہ ہونے والی تھی تو ٹیم کے مینیجر کو موبائل پر ایک دھمکی آمیز پیغام موصول ہوا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ پیغام میں کہا گیا تھا کہ پاکستان ایک دہشت گرد ملک ہے وہاں آپ کو بہت سے خطرات کا سامنا کرنا پڑے گا اور دولت اسلامیہ جو عراق اور شام میں کر رہی ہے، وہی حال آپ کا ہو گا اِس لیے ہم آپ کو یہ نصیحت کرتے ہیں کہ آپ پاکستان کا دورہ منسوخ کر کے واپس چلے جائیں۔

صوبائی وزیر داخلہ نے بتایا کہ زمبابوے کی جانب سے ہمارے ساتھ یہ ایس ایم ایس شیئر کیا گیا جس پر پاکستان کے خفیہ اداروں نے پیغام کر ٹریس کیا تو یہ معلوم کہ یہ ایس ایم ایس دہلی سے بھارتی خفیہ ایجنسی را نے بھیجا تھا۔

شجاع خانزادہ نے کہا کہ اِس پیغام سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ بھارت نہیں چاہتا تھا کہ پاکستان اور زمبابوے کے درمیان ہونے والی کرکٹ سیریز کامیاب ہو اور وہ پاکستان کو کرکٹ کے میدان میں بدنام کیا جا سکے۔

صوبائی وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ را تحریک طالبان پاکستان کے ساتھ مل کر ملک کے اندورنی معاملات میں دخل اندازی کر رہی ہے اور ملک میں ہونے والے دہشت گردی کے واقعات میں بھی ملوث ہے۔

واضع رہے کہ زمبابوے کرکٹ ٹیم نے گذشتہ ماہ پاکستان کا دورہ کیا تھا جس میں اُس نے دو ٹی 20 اور تین ایک روزہ میچ کھیلے تھے۔

اسی بارے میں