’نان چنے کھا کر ورلڈ چیمپئن کا مقابلہ نہیں ہو سکتا‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’ کیمپ میں نان چنے کھلاکر آپ کھلاڑیوں سے توقع نہیں رکھ سکتے کہ وہ ورلڈ چیمپئن کا مقابلہ کریں‘

پاکستانی ہاکی ٹیم کے کپتان محمد عمران نے اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ میں شکست کا سبب کھلاڑیوں کو نہ دی جانے والی سہولتوں کو قرار دیا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستانی ہاکی ٹیم اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ میں آٹھویں پوزیشن حاصل کرکے اپنی تاریخ میں پہلی بار اولمپکس میں شرکت سے محروم ہوگئی ہے۔

پاکستان ہاکی طبعی طور پر مر چکی ہے: سمیع اللہ

محمد عمران نے بیلجیئم سے وطن واپسی پر ایک انٹرویو میں کہا کہ آئرلینڈ اور فرانس جیسی ٹیموں کی تیاری بھی پاکستانی ٹیم سے اچھی تھی جبکہ پاکستانی کھلاڑی اس سے محروم رہے۔

انھوں نے کہا کہ’ کھلاڑیوں کو تربیت کے دوران ضروری سہولتیں نہیں ملیں۔ کیمپ میں کھجور اور روح افزا اور نان چنے کھلا کر آپ کھلاڑیوں سے توقع نہیں رکھ سکتے کہ وہ ورلڈ چیمپیئن کا مقابلہ کریں۔

’کھلاڑیوں کے پاس ملازمتیں نہیں ہیں انھیں ڈیلی الاؤنس تک نہیں ملتا اس کے باوجود کھلاڑی اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ کھیلنےگئے اور ہر میچ میں سخت محنت کی تاہم نتائج پاکستانی ٹیم کے حق میں نہیں گئے۔‘

محمد عمران نے کہا کہ وہ پاکستانی ہاکی ٹیم کےکپتان ہیں، کسی گلی کا بچہ نہیں ہیں کہ ان پر استعفیٰ دینے کے لیے دباؤ ڈالا جائے۔وہ جو فیصلہ بھی کریں گے خود کریں گے۔

انھوں نے کہا کہ حکومت نے شکست کے اسباب جاننے کے لیے جو کمیٹی بنائی ہے اس کا نتیجہ نکلنا چاہیے اور حقائق سامنے آنے چاہییں۔

اسی بارے میں