یونس کی شاندار اننگز، پاکستان نے ٹیسٹ سیریز جیت لی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یونس خان نے اس میچ میں اپنے ٹیسٹ کریئر کی 30ویں سنچری بنائی ہے

پاکستان نے سری لنکا کو تیسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں سات وکٹوں سے شکست دے کر تین میچوں کی سیریز دو ایک سے جیت لی ہے۔

پالیکیلے میں کھیلے گئے میچ میں سری لنکا نے مہمان ٹیم کو فتح کے لیے 377 رنز کا بڑا ہدف دیا جو پاکستان نے یونس خان کی شاندار بلے بازی کی بدولت آخری دن دوسرے سیشن میں حاصل کر لیا۔

آخری ٹیسٹ میچ کا آخری دن: تصاویر

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اپنا 101واں ٹیسٹ میچ کھیلنے والے یونس خان نے اپنے ٹیسٹ کریئر کی 30ویں سنچری بنائی اور 171 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

انھوں نے پہلے شان مسعود کے ساتھ مل کر تیسری وکٹ کے لیے 242 رنز کی شراکت قائم کی جو پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ میچ کی چوتھی اننگز میں کسی بھی وکٹ کے لیے سب سے بڑی شراکت ہے۔

شان کے آؤٹ ہونے کے بعد یونس خان اور مصباح الحق کی تجربہ کار جوڑی نے مزید کسی نقصان کے بغیر ٹیم کو فتح یاب کروا دیا۔

مصباح نے اس دوران نصف سنچری مکمل کی اور ان دونوں کے درمیان 127 رنز کی شراکت ہوئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption یونس اور شان نے پاکستان کی جانب سے چوتھی اننگز میں کسی بھی وکٹ کے لیے سب سے بڑی شراکت قائم کی

سری لنکن بولرز آخری دن صرف ایک پاکستانی وکٹ لے سکے۔ اؤٹ ہونے والے بلے باز شان مسعود تھے جو ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی پہلی سنچری بنانے کے بعد 125 کے انفرادی سکور پر تھرندو کوشل کی گیند پر سٹمپ ہوئے۔

یونس خان کو ان کی عمدہ اننگز پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا جبکہ سیریز کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز پاکستانی لیگ سپنر یاسر شاہ کے حصے میں آیا جنھوں نے اس سیریز میں 21 وکٹیں لیں۔

اس میچ میں پاکستان نے کسی ٹیسٹ میچ کی چوتھی اننگز میں اپنا سب سے بڑا ہدف حاصل کیا۔

سری لنکا کے خلاف تیسرے ٹیسٹ میچ میں فتح کی بدولت پاکستانی کرکٹ ٹیم ٹیسٹ کرکٹ کی عالمی درجہ بندی میں تین درجے ترقی کے بعد 101 پوائنٹس کے ساتھ تیسرے نمبر پر پہنچ گئی ہے۔

اس ٹیسٹ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر سری لنکا کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تھی اور سری لنکا نے اپنی پہلی اننگز میں 278 رنز بنائے تھے۔

اس کے جواب میں پاکستانی ٹیم پہلی اننگز میں 215 رنز بنا سکی تھی اور یوں سری لنکا کو پہلی اننگز میں 63 رنز کی برتری ملی تھی۔

دوسری اننگز میں کپتان اینجلو میتھیوز کی پانچویں ٹیسٹ سنچری کی بدولت سری لنکن ٹیم 313 رنز بنانے میں کامیاب رہی تھی اور اس طرح اسے پاکستان پر 376 رنز کی مجموعی برتری حاصل ہو گئی تھی۔

اسی بارے میں