’یونس خان سے بڑا کھلاڑی کوئی نہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption نو سال کے عرصے کے بعد سری لنکا میں ٹیسٹ سیریز جیتنا اہم بات ہے اور اس کا سہرا کپتان مصباح الحق اور ان کی ٹیم کے سر جاتا ہے: وقار یونس

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کوچ وقار یونس کا کہنا ہے کہ بڑے ہدف کو حاصل کرنے کے لیے بڑے کھلاڑیوں کی ضرورت ہوتی ہے اور پاکستانی ٹیم میں اس وقت یونس خان سے بڑا کوئی کھلاڑی نہیں ہے جن کی شاندار بیٹنگ نے پاکستان کو ٹیسٹ سیریز میں جیت سے ہمکنار کیا ہے۔

وقار یونس نے پالیکیلے سے بی بی سی اردو سروس کو دیے گئے انٹرویو میں کہا: ’پالیکیلے ٹیسٹ میں پاکستان کے پاس یونس خان ہی ایسا مہرہ تھے جن کی مدد سے377 رنز کا ہدف حاصل کیا جا سکتا تھا۔ یونس خان نے مشکل صورت حال میں اتنی بڑی اننگز کھیلی اور جس طرح کی شاندار کارکردگی دکھائی جو صرف وہی کر سکتے تھے۔‘

انھوں نے کہا کہ یونس خان اور شان مسعود کی ڈبل سنچری شراکت کے بعد یونس اور مصباح الحق کے درمیان 127 رنز کی شراکت ہدف تک پہنچنے میں مددگار ثابت ہوئی۔

وقار یونس نے کہا کہ نو سال کے عرصے کے بعد سری لنکا میں ٹیسٹ سیریز جیتنا اہم بات ہے اور اس کا سہرا کپتان مصباح الحق اور ان کی ٹیم کے سر جاتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ پاکستانی ٹیم کی ٹیسٹ کرکٹ کی حالیہ کارکردگی پر نظر ڈالیں تو ناقدین کی غیرضروری تنقید کی وجہ سمجھ میں نہیں آتی کیونکہ سال ڈیڑھ سال میں پاکستانی ٹیم نے ٹیسٹ کرکٹ میں آسٹریلیا، سری لنکا، نیوزی لینڈ اور بنگلہ دیش کو شکست دی ہے اور اگر کھلاڑیوں کی انفرادی کارکردگی کا جائزہ لیں تو بیٹسمینوں نے کئی سنچریاں بنائی ہیں جبکہ بولروں نے بھی کئی بار اننگز میں پانچ وکٹیں حاصل کی ہیں۔

وقار یونس نے اس سیریز میں یاسر شاہ کی بولنگ کو ون مین شو قرار دیتے ہوئے کہا کہ سعید اجمل کے بعد ہر کوئی مایوس ہوگیا تھا لیکن ٹیسٹ میچوں میں یاسر شاہ نے سعید اجمل کی کمی محسوس نہیں ہونے دی اسی طرح ذوالفقار بابر نے بھی بڑی عمدہ بولنگ کی ہے۔

انھوں نے کہا کہ یاسر شاہ نے اپنے کریئر کے ابتدائی نو ٹیسٹ میچوں میں ہی وکٹوں کی نصف سنچری مکمل کر لی ہے ایسی کارکردگی شین وارن کی طرف سے بھی ان کے کریئر کے ابتدائی میچوں میں نظر نہیں آئی تھی۔

وقار یونس نے کہا کہ سری لنکا کے خلاف ون ڈے سیریز کوئی نیا چیلنج نہیں ہے بلکہ انٹرنیشنل کرکٹ میں ہر روز آپ کو ایک نئے چیلنج کا سامنا رہتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ انھیں امید ہے کہ ون ڈے سیریز میں بھی پاکستانی ٹیم اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی کیونکہ سری لنکا کی ٹیم کو ہرایا جا سکتا ہے اور جو کھلاڑی ون ڈے سیریز کےلیے آ رہے ہیں انھیں ٹیسٹ سیریز کی جیت سے یقیناً حوصلے ملے گا۔

اسی بارے میں