ایشز میں شکست، ’ڈیرن لیہمن کی نوکری کو خطرہ نہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ڈیرن لیہمن نے سنہ 2013 میں آسٹریلیا کے کرکٹ کوچ کی حیثیت سے ذمہ داریاں سنبھالی تھیں

کرکٹ آسٹریلیا کے چیف ایگزیکٹو جیمز سدر لینڈ نے کہا ہے کہ انگلیڈ کے خلاف ایشز سیریز ہارنے کے باجود کرکٹ ٹیم کے کوچ ڈیرن لیہمن کو ان کے عہدے سے برخاست کیے جانے کا کوئی خطرہ نہیں ہے۔

پریس کانفرنس کے دوران جب جیمز سدر لینڈ سے پوچھا گیا کہ آیا ڈیرن لیہمن کی نوکری محفوظ ہے تو انھوں نے اس کا جواب ’ہاں‘ میں دیا۔

خیال رہے کہ ڈیرن لیہمن نے سنہ 2013 میں آسٹریلیا کے کرکٹ کوچ کی حیثیت سے ذمہ داریاں سنبھالی تھیں اور ان کی قیادت میں آسٹریلیا نے رواں سال مارچ میں اپنی سرزمین پر منعقد ہونے والا کرکٹ کا عالمی کپ جیتا تھا تاہم اب آسٹریلیا کی ٹیسٹ ٹیم نے رواں ایشز سیریز ہار چکی ہے۔

کرکٹ آسٹریلیا کے چیف ایگزیکٹو جیمز سدر لینڈ کا کہنا ہے کہ ٹیم کی بیرونِ ملک کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا۔

میلبرن میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اب ہم ہر سیریز کے بعد ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لیں گے۔

انھوں نے مزید کہا کہ بیرون ملک جا کر کرکٹ کھیلنا آسان نہیں ہوتا لیکن یہ ایک ایسی چیز ہے جو ہمیں بہتر کرنا ہو گی۔

جیمز سدر لینڈ کے مطابق ہم کرکٹ کی دنیا کی سب سے بہترین ٹیم بننا چاہتے ہیں اور اس کے لیے ہمیں بیرونِ ملک بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔

دوسری جانب آسٹریلیا کے سابق بیٹسمین ٹام موڈی نے بی بی سی ریڈیو فائیو لائیو میں ڈیرن لیہمن کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کی پوزیشن بہت مضبوط ہے۔ وہ صرف تین ماہ پہلے تک کرکٹ کے عالمی کپ کی فاتح ٹیم کے کوچ تھے۔

انھوں نے کہا ’ڈیرن لیہمن رات کی رات میں برے کوچ نہیں بن گئے۔ موجودہ ایشز سیریز میں شکست ان کی رپورٹ کارڈ پر ایک نشان ہے تاہم انھوں نے گذشتہ چند برسوں میں جو کچھ کیا وہ بہت مثبت ہے۔‘

ٹرینٹ بریج میں کھیلے جانے والے چوتھے ایشز ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا کو ایک اننگز اور 78 رنز سے شکست دینے کے بعد انگلینڈ کو موجودہ ایشز سیریز میں تین ایک کی ناقابلِ شکست برتری حاصل ہو گئی ہے جس کا مطلب یہ ہے کہ آسٹریلیا کی ٹیم ڈیرن لیہمن کی قیادت میں بیرونِ ملک کھیلی جانے والی گذشتہ پانچ میں سے تین ٹیسٹ سیریز ہار چکی ہے۔

کرکٹ آسٹریلیا کے چیف ایگزیکٹو جیمز سدر لینڈ نے سٹیون سمتھ کو مائیکل کلارک کی جگہ ٹیسٹ ٹیم کا کپتان مقرر کیے جانے کا بھی دفاع کیا۔

انھوں نے کہا کہ سمتھ نے کلارک کی غیر موجودگی میں دسمبر اور جنوری میں بھارت کے خلاف کھیلی جانے والی ٹیسٹ سیریز میں آسٹریلیا کی ٹیم کی کپتانی کی تھی۔

واضح رہے کہ آسٹریلیا کی کرکٹ ٹیم کے موجودہ کپتان مائیکل کلارک نے سنیچر کو کہا تھا کہ وہ انگلینڈ میں جاری ایشز سیریز کے بعد بین الاقوامی کرکٹ کو خیرباد کہہ دیں گے۔

اسی بارے میں