’میں مداحوں کی حمایت حاصل کرنا چاہتا ہوں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یہ جوکووچ کا مجموعی طور پر دسواں گرینڈ سلیم ٹائٹل ہے۔ اس سے قبل انھوں نے رواں سال آسٹریلین اوپن اور ومبلڈن میں کامیابی حاصل کی تھی لیکن فرنچ اوپن کے فائنل میں انھیں شکست ہوئی تھی

ٹینس کی عالمی درجہ بندی میں پہلے نمبر پر براجمان سربیا کے نوواک جاکووچ کا کہنا ہے کہ یو ایس اوپن میں راجر فیڈرر کے خلاف فائنل میچ میں شائقین کی جانب سے مخالفت کے باوجود وہ اپنے مداحوں کی حمایت دوبارہ حاصل کر لیں گے۔

واضح رہے کہ اتوار کو سال کے آخری گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ یو ایس اوپن کے فائنل میں نواک جوکو وچ نے ایک سخت مقابلے کے بعد سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر کو 4-6، 7-5، 4-6 اور 4-6 سے شکست دے کر رواں سال اپنا تیسرا گرینڈ سلیم جیتا۔

یہ جوکووچ کا مجموعی طور پر دسواں گرینڈ سلیم ٹائٹل ہے۔ اس سے قبل انھوں نے رواں سال آسٹریلین اوپن اور ومبلڈن میں کامیابی حاصل کی تھی لیکن فرنچ اوپن کے فائنل میں انھیں شکست ہوئی تھی۔

یو ایس اوپن کے فائنل میچ کے دوران فیڈرر کے مداحوں نے جوکووچ سے ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے ان کا مذاق اڑایا تھا۔

اس حوالے سے جوکووچ کا کہنا تھا ’میں یہاں مداحوں کی حمایت حاصل کرنے آیا ہوں اور امید کرتا ہوں کہ مستقبل میں مجھے یہ حمایت حاصل ہو جائے گی۔‘

انھوں نے اس بات کا اقرار کیا کہ یو ایس اوپن کے فائنل میں شائقین کی مخالفت سے ان کے کھیل میں خلل پڑا۔

جوکووچ کے مطابق ’ظاہر سی بات ہے کہ تین گھنٹوں اور 20 منٹ کے میچ میں اپ ڈاؤنز آتے ہیں اور اس آپ کے کھیل میں خلل بھی پڑتا ہے تاہم اہم بات یہ ہے کہ آپ اپنے کھیل پر توجہ دیں اور اس بات کو یاد کریں کہ آپ یہاں کس لیے آئے ہیں؟‘

فیڈرر کے خلاف میچ جیتنے کے بعد جوکووچ کا کہنا تھا میں یہاں بیٹھ کر شائقین پر تنقید نہیں کر سکتا۔

نواک جوکووچ نے اپنی جیت کے بعد کہا’ راجر جو کررہے ہیں وہ قابل تعریف ہے۔ وہ اب بھی بہتری کی جانب مائل ہیں اور میرے دل میں ان کے لیے عزت ہے۔ جب آپ کو علم ہو کہ آپ کا مقابلہ بہترین کھلاڑی سے ہے تو آپ کو جیتنے کے لیے اپنا بہترین کھیل پیش کرنا ہوتا ہے اور یہ شام میرے لیے ناقابل یقین تھی۔‘

راجر فیڈرر نے میچ کے بعد کہا ’یہ اچھی مسابقت ہے لیکن شاید آج کی رات نہیں! ایک دوسرے کے ساتھ کھیلنا ہمیشہ مشکل رہا ہے اور میرے خیال سے ہم دونوں یہاں سے اپنے بارے میں اور ایک دوسرے کے بارے میں بہتر علم کے ساتھ لوٹیں گے۔‘

17 بار گرینڈ سلیم جیتنے والے فیڈرر نے میچ سے قبل کہا تھا ’رواں سال نوواک زبردست فارم میں ہیں اور ہم جب بھی کھیلتے ہیں تو میچ میں بہت کچھ ہوتا ہے۔‘

اسی بارے میں