زمبابوے نے پھر موقع گنوا دیا، سیریز پاکستان کے نام

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption عمر اکمل نے 38 رنز بنائے اور ناٹ آؤٹ رہے

زمبابوے نے ایک بار پھر پاکستان کو ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ میں شکست دینے کا موقع گنوا دیا۔

دونوں ٹیموں کے بیٹسمینوں کی جانب سے مایوس کن کارکردگی والے اس میچ میں پاکستان نے عمدہ بولنگ کے بل پر 15 رنز سے کامیابی حاصل کر کے ٹی ٹوئنٹی سیریز دو صفر سے اپنے نام کر لی۔

شان ولیمز کی اننگز کام نہ آ سکی، پاکستان کی 15 رنز سے جیت

زمبابوے کی ٹیم پچھلے تین ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں پاکستانی ٹیم کا گھیرا تنگ کرتی آ رہی تھی لیکن دو چار ہاتھ جبکہ لبِ بام رہ گیا کے مصداق وہ جیت کے قریب آ کر اس سے دور ہوگئی تھی اس بار بھی اس نے پاکستانی بیٹنگ کو قابو کر لیا لیکن اس کے بیٹسمین بھی پاکستانی بولنگ کے قابو میں آگئے۔

ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کو ذہن میں رکھ کر کپتان شاہد آفریدی کی جانب سے تجربے کرنے کی صدائیں ضرور سنائی دے رہی ہیں لیکن یہ تجربے زیادہ تر نئے کھلاڑیوں کے بجائے آزمودہ کار اور تجربہ کار کھلاڑیوں پر ہی ہو رہے ہیں۔

اگر یہ تجربے نئے کھلاڑیوں کو مناسب مواقع دینے کے ہوتے تو بلال آصف مسلسل دوسرے دورے سے بغیر کھیلے واپس نہ آتے اور عامر یامین کو ایک میچ میں کھیلنے کا موقع ضرور مل جاتا۔

پاکستان نے دو تبدیلیاں کرتے ہوئے وہاب ریاض اور مختاراحمد کی جگہ محمد عرفان اور محمد حفیظ کو ٹیم میں شامل کیا۔

اسے اتفاق ہی کہا جا سکتا ہے کہ پہلے میچ کی طرح اس بار بھی ٹاس پاکستان نے جیتا اور پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 136 کا سکور بنایا تاہم اس بار پہلے میچ کے مقابلے میں اس کی دو وکٹیں کم گریں لیکن تجربہ کار بیٹنگ لائن کی طرف سے یہ ایک اور مایوس کن کارکردگی تھی۔

احمد شہزاد نے چوتھے اوور میں ایک کمزور اور بے ضرر سی گیند پر پوائنٹ پر کیچ دے کر وکٹ گنوائی۔

محمد حفیظ نے تین چوکے لگاکر اعتماد دکھایا تھا لیکن وہ بھی مڈ وکٹ پر کیچ دے بیٹھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شان ولیمز نے پانچویں وکٹ کی شراکت میں قیمتی 50 رنز بنا کر میزبان ٹیم کے پست حوصلے پھر بلند کر دیے

شعیب ملک اور صہیب مقصود کی وکٹیں صرف چھ گیندوں کے فرق سےگریں تو مہمان ٹیم مکمل طور پر دباؤ میں آ چکی تھی۔

عمر اکمل اور محمد رضوان کی 34 رنز کی شراکت سکور کو 106 تک لے گئی لیکن ایک بار پھر چھ گیندوں کے فرق سے گرنے والی رضوان اور شاہد آفریدی کی وکٹوں نے پاکستانی ٹیم کی بڑے سکور تک پہنچنے کی امیدوں کو زد پہنچائی۔

عمراکمل اور عماد وسیم 15 گیندیں کھیل کر 26 رنز کا اضافہ کرنے میں کامیاب ہوئے۔

زمبابوے کی اننگز بھی پاکستان سے مختلف نہ تھی۔ صرف 24 رنز پر چار وکٹوں کے گرنے کے بعد سکندر رضا اور شان ولیمز نے پانچویں وکٹ کی شراکت میں قیمتی 50 رنز بنا کر میزبان ٹیم کے پست حوصلے پھر بلند کر دیے لیکن پہلے سکندر رضا اور پھر چگمبورا کے آؤٹ ہونے سے زمبابوے کے لیے ہدف مشکل ہوگیا اور شان ولیمز کی ناقابل شکست 40 رنز کی اننگز بھی اپنی ٹیم کو منزل پر نہ پہنچا سکی۔

عمران خان جونیئر اور محمد عرفان دو دو وکٹوں کے ساتھ کامیاب رہے جبکہ سہیل تنویر اور عماد وسیم نے بھی اپنی موجودگی کا احساس دلایا البتہ کپتان شاہد آفریدی مسلسل دوسرے میچ میں بھی وکٹ سے محروم رہے۔

اسی بارے میں