’آسٹریلیا کی ٹیم حد سے زیادہ حساس ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین شہر یار خان نے کہا ہے کہ آسٹریلیا کی کرکٹ ٹیم نے ’حد سے زیادہ حساس‘ ہونے کی وجہ سے اپنا دورۂ بنگلہ دیش منسوخ کیا ہے۔

شہر یار خان نے سنہ 2003 کے بعد پاکستان میں ’دہشت گردی کے واقعات میں ہلاک‘ ہونے والوں افراد کے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں ان واقعات میں ایک اندازے کے مطابق تقریباً 50,000 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

آسٹریلیا کا بنگلہ دیش کا دورہ غیر معینہ مدت کےلیے ملتوی

سکیورٹی خدشات: آسٹریلیا کی بنگلہ دیش روانگی موخر

انھوں نے کہا کہ بنگلہ دیش میں ایک اطالوی شخص کی ہلاکت کے بعد آسٹریلیا نے اپنا دورہ منسوخ کر دیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ آسٹریلیا کو بنگلہ دیش، بھارت، سری لنکا اور پاکستان کرکٹ بورڈ پر اعتماد نہیں ہے۔

کرکٹ بورڈ کے چیئرمین کے مطابق آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی کرکٹ ٹیمیں’ شاید حد سے زیادہ حساس ہیں۔‘

واضح رہے کہ پاکستان میں رواں برس مئی میں چھ برس بعد بین الاقوامی کرکٹ بحال ہوئی جب زمبابوے کی کرکٹ ٹیم نے پاکستان کا دورہ کیا۔

اس سے قبل سنہ 2009 میں سری لنکا کی کرکٹ ٹیم کی بس پر ہونے والے حملے کے بعد بین الاقوامی ٹیموں نے سکیورٹی خدشات کی وجہ سے پاکستان آنے سے انکار کر دیا تھا۔

خیال رہے کہ آسٹریلوی کرکٹ ٹیم نے جمعرات کو سکیورٹی خدشات کی بنا پر بنگلہ دیش کا دورہ غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کیا تھا۔

آسٹریلوی ٹیم 28 ستمبر کو بنگلہ دیش روانہ ہونے والی تھی۔

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ نے آسٹریلیا نے اس فیصلے پر ’مایوسی‘ کا اظہار کیا ہے۔

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ نے بدھ کو آسٹریلوی ٹیم کو دورے کے دوران انتہائی سخت سکیورٹی فراہم کرنے کا وعدہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ’ ہم اسی طرح کی سکیورٹی فراہم کریں گے جیسا کہ کسی سربراہ کو دورے کے دوران دی جاتی ہے۔‘

جمعرات کو کرکٹ آسٹریلیا نے دورے کو ملتوی کرنے کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ سکیورٹی خدشات کے متعلق آزاد جانچ کے مطابق بنگلہ دیش میں شدت پسندی کا خطرہ ہے جس میں آسٹریلوی شہریوں کو ہدف بنایا جا سکتا ہے۔

ادھر انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم اگلے برس نومبر اور دسبمر میں بنگلہ دیش کا دورہ کرے گی جس میں دو ٹیسٹ اور تین ایک روزہ میچ کھیلے جائیں گے۔

دوسری جانب بنگہ دیش کی پولیس ایک اطالوی امدادی ورکر کی ہلاکت کی تحقیق کر رہی ہے جنھیں پیر کو ہلاک کیا تھا۔

اسی بارے میں