انگلش بیٹسمینوں کی کمزوری سے فائدہ اٹھاؤں گا: یاسر شاہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یاسر شاہ زخمی ہونے کے باعث ابوظہبی ٹیسٹ میچ نہیں کھیل سکے تھے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے لیگ سپنر یاسر شاہ کو بخوبی اندازہ ہے کہ انگلینڈ کے بیٹسمین لیگ سپن بولنگ کے خلاف کمزور ہیں اور وہ دوسرے ٹیسٹ میں ان کی اس کمزوری کا بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے پوری طرح تیار دکھائی دیتے ہیں۔

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دوسرا ٹیسٹ میچ جمعرات سے دبئی میں شروع ہو رہا ہے۔

یاسر اور اظہر دبئی ٹیسٹ میں شرکت کے لیے فٹ

’یاسر شاہ کی کمی شدت سے محسوس ہوئی ہے‘

یاسر شاہ کمر میں تکلیف کے سبب ابوظہبی میں کھیلے جانے والے پہلا ٹیسٹ میں شرکت نہیں کر سکے تھے۔

یاسر شاہ کا کہنا ہے کہ انھوں نے اس سیریز کے لیے بہت زیادہ محنت کر رکھی ہے لیکن پہلے ٹیسٹ میچ کمر کی تکلیف میں مبتلا ہوکر نہ کھیلنے کا انھیں بہت دکھ ہے۔

اگر وہ ابوظہبی ٹیسٹ کھیلتے تو یقیناً کامیاب ہوتے کیونکہ وہ وکٹ اگرچہ سست تھی لیکن چونکہ وہ دوسرے سپنروں کے مقابلے میں تیز گیندیں کرتے ہیں لہٰذا انھیں وکٹیں ملتیں۔

یاسر شاہ کو پاکستان کی طرف سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے کم ٹیسٹ میچوں میں وکٹوں کی نصف سنچری مکمل کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔

انھوں نے کہا کہ وہ باقاعدگی سے انگلش بیٹسمینوں کی وڈیوز دیکھتے آ رہے ہیں اور ان کی خامیوں کا جائزہ لیتے ہوئے اپنی بولنگ سے ان کے لیے مشکلات پیدا کرنے کی کوشش کریں گے۔

یاسر شاہ نے کہا کہ ابوظہبی کے مقابلے میں دبئی کی وکٹ اسپنروں کے لیے زیادہ سازگار ہے اور انھیں یقین ہے کہ جس طرح انھوں نے آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے خلاف عمدہ بولنگ کی تھی، اسی کارکردگی کا مظاہرہ وہ انگلینڈ کے خلاف بھی کریں گے۔

یاسر شاہ نے دبئی میں آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے خلاف دو ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں جن میں انھوں نے 14 وکٹیں حاصل کی ہیں۔

یاسر شاہ کا کہنا ہے کہ وہ خود پر دباؤ محسوس نہیں کرتے لیکن یہ ضرور ہے کہ ہر کسی نے ان سے اس سیریز سے قبل ہی بے پناہ توقعات وابستہ کر رکھی تھیں اور ہر کوئی یہی کہتا تھا کہیہ سیریز پاکستان کو یاسر ہی نے جتوانی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یاسر شاہ نے دبئی میں آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے خلاف دو ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں جن میں انھوں نے 14 وکٹیں حاصل کر رکھی ہیں

یاسر شاہ کہتے ہیں کہ بولنگ کوچ مشتاق احمد نے انھیں بولنگ کے بارے میں کئی اہم باتیں بتائی ہیں۔

یاسر شاہ کا کہنا ہے کہ سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ سیریز نے ان کے اعتماد میں بے پناہ اضافہ کیا۔

یاد رہے کہ تین ٹیسٹ میچوں کی اس سیریز میں یاسر شاہ نے 24 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

یاسر شاہ کا کہنا ہے کہ وہ آسٹریلوی شہرۂ آفاق لیگ سپنر شین وارن سے متاثر ہیں جبکہ پاکستانی لیگ سپنر عبدالقادر سے بھی مشورے لیتے رہے ہیں۔

اسی بارے میں