کرکٹر امت مشرا خاتون سے بدسلوکی کے الزام میں گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption امت مشرا 32 سال کے لیگ سپن بولر ہیں

بھارتی کرکٹر امت مشرا کو ایک خاتون کے ساتھ بدسلوکی کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے تاہم وہ ضمانت پر رہا ہو گئے ہیں۔

بنگلور پولیس نے تقریباً تین گھنٹوں تک پوچھ گچھ کرنے کے بعد انھیں گرفتار کیا۔ لیکن گرفتاری کے فوراً بعد ہی انھیں ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔

مرکزی بنگلور کے ڈپٹی کمشنر سندیپ پاٹل نے کہا کہ امت مشرا پر ہاتھ اٹھانے اور ان کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے الزامات ہیں۔

ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ امت مشرا پر انڈین پینل کوڈ کی دفعہ 325 اور 354 اے کے تحت کیس درج کیا گیا ہے۔

اگر ان پر لگائے جانے والے الزامات ثابت ہو جاتے ہیں تو امت مشرا کو سات سال تک کی سزا ہو سکتی ہے۔

پولیس کے مطابق 25 ستمبر کو بنگلور کے ایک ہوٹل میں ایک خاتون نے امت مشرا سے ملاقات کی تھی۔

27 ستمبر کو خاتون نے بنگلور پولیس کوشکایت کی اور ایف آئی آر درج کر لی گئی۔

اپنی شکایت میں خاتون نے کہا تھا کہ ہوٹل کے کمرے میں امت مشرا کے ساتھ ان کی بحث ہوئی اور اس بحث کے دوران امت مشرا نے ہاتھ اٹھایا۔

واقعے کے وقت بنگلور میں بھارتی ٹیم کا تربیتی کیمپ جاری تھا۔

امت مشرا 32 سال کے لیگ سپن بولر ہیں۔ انھوں نے 16 ٹیسٹ میں 58 اور 31 ون ڈے میں 49 وکٹ لیے ہیں۔ وہ آئی پی ایل میں بھی کھیلتے ہیں۔

اسی بارے میں