سرینا ولیمز کا موبائل اٹھانے کی جرات نہ کرنا

تصویر کے کاپی رائٹ All Sports
Image caption سرینا ولیمز کا کہنا ہے کہ وہ اُس شخص کے پیچھے ’بہت تیزی سے دوڑیں‘ اور ’پلک جھپکتے میں اسے جاپکڑا‘

ایک مشورہ ہے ہر اُس شخص کے لیے جو سرینا ولیمز کا موبائل فون اٹھانے کی منصوبہ بندی کررہا ہے، ’یہ زحمت مت اُٹھایےگا‘۔

امریکی ٹینس سٹار جو 21 گرینڈ سلیم سنگلز کے ٹائٹل جیت چکی ہیں آپ کا تعاقب کریں گی اور پھر آپ کو پکڑ لیں گی۔

یہ سبق حاصل ہوا ایک صاحب کو جنھوں نے 34 سالہ سرینا ولیمز کا موبائل فون اُس وقت اُٹھایا جب وہ ایک ریستوران میں موجود تھیں۔

دنیا کی نمبر ون ٹینس سٹار نے اپنے فیس بُک صفحے پر سُپر وومین کے طور پر اپنی تصویر پوسٹ کرتے ہوئے اُس کے ہمراہ لکھا کہ ’کل رات کے کھانے پر میرے ساتھ ایک بہت عجیب واقعہ پیش آیا۔‘

ولیمز جو انجریز سے نجات حاصل کرنے کے لیے ٹورنامنٹس میں حصہ نہیں لے رہی ہیں نے دعویٰ کیا کہ ’ایک شخص نے میرا فون اٹھایا اور تیزی سے ریستوران سے باہر نکل گیا۔‘

سرینا کے مطابق: ’اُنھیں میرے ردِعمل کی توقع نہیں تھی (اسی وجہ سے انھوں نے سُپروومین کی تصویر پوسٹ کی)، میں فوراً اٹھی، اس کی سمت دوڑی اور آرام دہ ریستوران سے باہر نکل آئی (ایک یا دو کرسیوں کو پھلانگتے ہوئے) اور اُس شخص کا پیچھا کیا۔‘

سرینا ولیمز کا کہنا ہے کہ وہ اُس شخص کے پیچھے ’بہت تیزی سے دوڑیں‘ اور ’پلک جھپکتے میں اسے جاپکڑا۔‘

اُن کا مزید کہنا ہے کہ ’میں پُرسکون رہی، بہت زیادہ دھمکی آمیز انداز اختیار نہیں کیا، کیوں کہ شور شرابا کرکے میں مجمع نہیں لگا سکتی تھی، اور میں نے بہت آرام سے اُن صاحب سے پوچھا کہ کیا انھوں نے ’غیر ارادی طور پر‘ غلط فون اُٹھا لیا تھا؟‘

وہ یہ الفاظ سُن کر وہ شخص لڑکھڑا گئے، یقیناً وہ اس صورتحال کی توقع نہیں کررہا تھا۔ آخر کار اس شخص نے کہا: ’او میرے خُدا، میں نے واقعی غلط فون اٹھا لیا ہے۔ میں وہاں بہت زیادہ اُلجھ گیا تھا، یقیناً میں نے غلط فون اُٹھالیا ہے۔‘

سرینا ولیمز کہتی ہیں کہ ریستوران میں موجود دیگر لوگوں نے اُن کے لیے ’کھڑے ہوکر تالیاں بجائیں۔‘

وہ اسے ’عورتوں کی جیت قرار دیتی ہیں‘ اور کہتی ہیں کہ انھوں نے ’وہاں موجود ہر مرد کو یہ دکھا دیا کہ میں بزدلوں کا مقابلہ کرسکتی ہوں۔‘

اسی بارے میں