موہالی ٹیسٹ: بھارت نے جنوبی افریقہ کو شکست دے دی

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption بھارت کی جانب سے رویندرا جدیجہ نے پانچ وکٹیں حاصل کیں

موہالی میں بھارت اور جنوبی افریقہ کے درمیان کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز بھارت نے جنوبی افریقہ کو 108 رنز سے شکست دے دی ہے۔

اب سے کچھ دیر قبل جنوبی افریقہ کی پوری ٹیم 217 رنز کے ہدف کے تعاقب میں صرف 109 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

بھارت کی جانب سے رویندر جدیجہ نے پانچ، ایشون نے تین اور امت مشرا نے ایک وکٹ حاصل کی۔

میچ کا تازہ سکور جاننے کے لیے یہاں کلک کریں

بھارت کے بعد جنوبی افریقہ کے بلے باز بھی مشکل میں

میچ کے تیسرے روز جب جنوبی افریقہ نے اپنی دوسری اننگز کا آغاز کیا تو اسے ابتدا سے ہی مشکلات کا سامنا رہا اور اس کا کوئی بھی بلے باز کریز پر جم کر نہ کھیل سکا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption جنوبی افریقی سپنرز سائمن ہارمر اور عمران طاہر نے چار چار وکٹیں حاصل کیں

جنوبی افریقہ کی جانب سے سب سے زیادہ رنز وین زیل نے بنائے جو 36 رنز بنا کر ایشون کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے۔

اس سے قبل بھارت نے کل کے سکور دو وکٹوں کے نقصان پر 125 رنز اپنی اننگز کا دوبارہ غاز کیا تو 75 رنز کا اضافہ کرکے اس کی پوری ٹیم آؤٹ ہو گئی۔جنوبی افریقہ کی جانب سے بھی سپنرز نے اچھی بولنگ کی اور ہارمر، عمران طاہر نے چار، چار وکٹیں حاصل کیں۔

تیسرے روز پہلے کپتان وراٹ کوہلی 29 رنز بناکر آؤٹ ہوئے پھر ایک اوور بعد چیتیشور پجارا 77 رنز بناکر گئے اور اگلے ہی اوور میں اجنکیا رہانے بھی چلے گئے۔

اس کے بعد رویندر جڈیجہ اور وکٹ کیپر ساہا نے قدرے مزاحمت کی کوشش کی لیکن جڈیجہ صرف آٹھ رنز بناکر آؤٹ ہوئے جبکہ ان کے بعد آنے والے سپنر امت مشرا ایک اوور بعد دو رنز بناکر ہارمر کا شکا ہوئے۔ ایشون تین رننز بنا کر عمران طاہر کا شکار ہوئے۔

دوسرے دن کھیل کے اختتام پر بھارت نے اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 125 رنز بنائے تھے اور اسے 142 رنز کی مجموعی برتری حاصل تھی۔

Image caption کپتان وراٹ کوہلی 29 رنز بناکر وین زل کا شکار ہوئے

جب کھیل کا اختتام ہوا تو پجارا 63 اور وراٹ کوہلی 11 رنز پر کھیل رہے تھے۔ اجنکیا رہانے صرف دو رن بنا سکے انھیں ہیمر نے آؤٹ کیا۔

اس سے قبل جمعہ کو جنوبی افریقہ نے 28 رنز دو کھلاڑی آؤٹ سے اپنی پہلی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو پوری ٹیم صرف 184 رنز پر آؤٹ ہو گئی۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے سب سے زیادہ 63 رن اے بی ڈیویلیئرز نے بنائے جبکہ بھارت کی طرف سے ایشون نے پانچ وکٹیں حاصل کیں۔

دوسرے روز ہاشم آملہ اور ایلگر نے بیٹنگ شروع کی تو 85 کے مجموعی سکور پر ایلگر، ایشون کی ایک بال پر جدیجا کو کیچ تھما بیٹھے۔ انھوں نے 37 رنز بنائے۔

ہاشم آملہ جب 43 رن بنا کر کھیل رہے تھے تو اشون نے انھیں وکٹ کیپر ساہا سے سمٹپ کروا دیا اور اس طرح اس کی چار وکٹیں گر گئیں۔

ولاس بھی ایک رن بنانے کے بعد اشون کی ایک گیند پر جڈیجا کو کیچ دے بیٹھے اور فوراً بعد محض تین رن پر فیلینڈر کو جڈیجا نے آؤٹ کیا جن کا کیچ راہا نے نے پکڑا۔

سات رن بنانے کے بعد ہارمیر امت مشرا کی ایک گیند پر ایل بی ڈبلیو قرار دیے گئے جبکہ جڈیجا نے ڈیل سٹین کو اس وقت سٹمپ کروایا جب وہ چھ رن بنا کر کھیل رہے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارتی سپن گیندباز روی چندرن اشون نے پانچ وکٹیں حاصل کیں

ڈیویلیئرز کو امت مشرا نے بولڈ کر دیا اور عمران طاہر بھی چار رن بنانے کے بعد اشون کی ایک گیند پر پجارا کو اپنا کیچ تھما بیٹھے۔

پہلے روز ہی نو کے مجموعی سکور پر وین زویل اشون کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہو گئے تھے اور نو کے سکور پر ہی جڈیجہ نے ڈوپلیسس کو صفر پر آؤٹ کر دیا تھا۔

بھارت اپنی پہلی اننگز میں 201 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

بھارت کی طرف سے پہلی اننگ میں اوپنر مرلی وجے نے سب سے زیادہ 75 رن سکور کیے تھے جبکہ جنوبی افریقہ کی طرف سے ڈین ایلگر نے سب سے زیادہ چار وکٹیں حاصل کی تھیں۔

دونوں ٹیموں کے درمیان چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا یہ پہلا ٹیسٹ میچ ہے۔

اس سے قبل اسی دورے کے دوران ٹی20 اور ون ڈے میچوں کی سیریز میں جنوبی افریقہ بھارت کو شکست دے چکا ہے۔

اسی بارے میں