تیسرے ون ڈے: انگلینڈ چھ وکٹوں سے جیت گیا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption جیمز ٹیلر 61 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں

شارجہ میں پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان چار ایک روزہ کرکٹ میچوں کی سیریز کے تیسرے میچ میں پاکستان کے 208 رنز کے ہدف کے تعاقب میں انگلینڈ کے بیٹسمینوں نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے مطلوبہ ہدف صرف چار وکٹوں کے نقصان پر پورا کر لیا۔ انگلینڈ کی طرف سے جیمز ٹیلر نے 67 جب کہ جے سی بٹلر نے 49 رنز کی ناقابل شکست اننگ کھیلی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption پاکستان نے ابتدا میں وکٹیں تو حاصل کیں لیکن بالرز انگلش بیٹسمینوں پر دباؤ رکھنے میں ناکام رہے

ایئن مارگن 35 رنز بنا کر شعیب ملک نے بولڈ کیا۔ اس سے قبل الیکس ہیلز بھی 27 رنز کی ایک محتاط اننگز کھیل کر ظفر گوہر کے ہاتھو آؤٹ ہوئے تھے۔

آؤٹ ہونے والے دوسرے انگلش بلے باز جو روٹ تھے جو نوجوان سپنر ظفر گوہر کی ایک روزہ میچوں میں پہلی وکٹ بنے۔

تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان چھ وکٹوں سے جیت گیا، حفیظ کی شاندار سنچری

ابوظہبی میں انگلینڈ کی فتح، سیریز برابر

انگلینڈ کی جانب سے الیکس ہیلز اور جیسن روائے نے اننگز کا آغاز کیا تو 12 رنز پرانگلینڈ کی پہلی وکٹ گر گئی جب جیسن روائے سات رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption انگلش بولرز نے ایک بار پھر بہتر بولنگ کا مظاہرہ کیا

اس سے قبل پاکستان کی پوری ٹیم آخری اوور میں 208 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

انگلینڈ کی جانب سے کرس ووکس چار وکٹیں حاصل کر کے نمایاں بولر رہے۔ پاکستان کی جانب سے اس میچ میں تین بلے باز رن آؤٹ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption محمد حفیظ اپنی نصف سنچری نہ بنا سکے اور 45 کے سکور پر آؤٹ ہوئے

پاکستانی اننگز کے آخری اوورز میں وہاب ریاض نے جارہانہ بلے بازی کرتے ہوئے 35 گیندوں پر 33 رنز بنائے۔ ان کی اننگز میں تین چھکے شامل تھے۔

شارجہ میں کھیلے جانے والے اس میچ میں پاکستانی کپتان نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تو اوپنر اظہر علی اور بابر اعظم نے 45 رنز کا آغاز فراہم کیا۔بابر اعظم 22 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

اس کے بعد محمد حفیظ اور اظہر علی نے دوسری وکٹ کی شراکت میں 47 رنز بنائے۔ محمد حفیظ 45 اور اظہر علی 36 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

پاکستانی مڈل آرڈر کی جانب سے ایک مرتبہ پھر مایوس کن کاکردگی دیکھنے کو ملی اور سرفراز احمد 26، شعیب ملک 16 اور محمد رضوان صرف ایک رن بنا سکے۔

اس میچ میں پاکستان کو اپنے لیگ سپنر یاسر شاہ کی خدمات حاصل نہیں ہیں اور ان کی جگہ ظفر گوہر اپنا پہلا ون ڈے انٹرنیشنل میچ کھیل رہے ہیں۔

احمد شہزاد اس میچ میں بھی ٹیم میں جگہ بنانے میں کامیاب نہیں ہو سکے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ظفر گوہر پاکستان کے لیے اپنا پہلا ون ڈے انٹرنیشنل میچ کھیل رہے ہیں

انگلینڈ نے اس میچ میں بھی وہی ٹیم میدان میں اتارنے کا فیصلہ کیا ہے جس نے ابوظہبی میں دوسرے میچ میں کامیابی حاصل کی تھی۔

چار میچوں کی یہ سیریز فی الوقت ایک ایک سے برابر ہے۔

سیریز کے ابتدائی دو ون ڈے میچ ابوظہبی میں کھیلے گئے جن میں سے پہلا پاکستان اور دوسرا میچ انگلینڈ جیتنے میں کامیاب ہوا تھا۔

پہلے ایک روزہ میچ میں پاکستان نے عمدہ بولنگ اور پھر محمد حفیظ کی ذمہ دارانہ بلے بازی کی بدولت انگلینڈ کو چھ وکٹوں سے شکست دی تھی۔

دوسرے ایک روزہ میچ میں انگلینڈ کے بلے بازوں نے عمدہ واپسی کرتے ہوئے پاکستان کو جیتنے کے لیے 284 رنز کا ہدف دیا، جس کے تعاقب میں پاکستان کی پوری ٹیم 188 رنز ہی بنا سکی تھی۔

اسی بارے میں