انگلینڈ نے پاکستان کو سپر اوور میں شکست دے دی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption حفیظ ایک کے سکور پر رن آؤٹ ہو گئے

شارجہ میں پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی میچوں کی سیریز کے آخری میچ میں انگلینڈ نے سپر اوور میں پاکستان کو شکست دے کر سیریز تین، صفر سے جیت لی ہے۔

پاکستان نے انگلینڈ کو سپر اوور میں میچ جیتنے کے لیے چار رنز کا ہدف دیا تھا جسے انگلینڈ نے سپر اوور کی پانچویں گیند پر حاصل کر لیا۔

اس سے قبل پاکستان کی جانب سے کپتان شاہد آفریدی اور عمر اکمل سپر اوور میں بیٹنگ کرنے آئے اور صرف تین رنز ہی بنا سکے۔

انگلینڈ کی جانب سے جاز بٹلر اور مورگن بیٹنگ کرنے آئے، جبکہ پاکستان کی جانب سے شاہد آفریدی سپر اوور کروایا۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان کو جیتنے کے لیے آخری اوور کی آخری گیند پر دو رنز درکار تھے لیکن سہیل تنویر صرف ایک رن بنانے میں ہی کامیب ہو سکے۔

اس سے قبل شعیب ملک عمدہ 75 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے۔

انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 20 اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان 154 رنز بنائے۔

155 رنز کے تعاقب میں پاکستان کو پہلے ہی اوور میں احمد شہزاد کی صورت میں نقصان اٹھانا پڑا جو 4 رنز بنا کر بولڈ ہو گئے۔

اس کے بعد پہلے ہی اوور کی آخری گیند پر محمد حفیظ غیر ضروری اور غیر ذمہ دارانہ طور پر رن آؤٹ ہو گئے۔

تیسرے اوور میں رفعت اللہ صفر پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہو گئے۔ رفعت کے آؤٹ ہونے کے بعد شعیب ملک اور محمد رضوان کی شراکت داری سے سکور 50 رنز تک پہنچ گیا۔ انگلینڈ کے بولر عادل رشید نے اپنی گیند پر محمد رضوان کا کیچ لے لیا۔ وہ 24 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

انگلینڈ کی جانب سے روئے اور ونس نے اننگز کا آغاز تو اپنا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ کھیلنے والے عامر یامین نے پہلی گیند پر روئے کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ کر دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پہلے دونوں میچوں میں بھی انگلینڈ نے ٹاس جیتا تھا

انگلینڈ کے بلے باز روٹ جارحانہ انداز اپنائے ہوئے تھے اور انھیں شاہد آفریدی نے بولڈ کر دیا۔

اس کے بعد معین علی پہلی ہی گیند پر آفریدی کی گیند پر آفریدی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

تین وکٹوں کے نقصان کے بعد مورگن اور وینس کے درمیان 20 رنز کی شراکت داری شعیب ملک نے ایک خوبصورت گیند پر مورگن کو بولڈ کر کے ختم کر دی۔

11ویں اوورز میں انگلینڈ کو پانچواں نقصان بٹلر کی صورت میں ہوا جو ایک غیر ضروری رن لینے کی کوشش میں رن آؤٹ ہو گئے۔

5 وکٹوں کے نقصان کے بعد انگلینڈ کا سکورز بنانے کی رفتار میں کمی آئی تاہم 13ویں اوور میں بیلنگز نے جارحانہ موڈ اختیار کیا اور چوکا لگانے کے بعد ایک باؤنڈری لگانے کی کوشش میں انور علی کی گیند پر عمر اکمل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

اس کے بعد اوپنر ونس اور وکس کے درمیان عمدہ شراکت داری میچ کے آخری اوور کی پہلی گیند تک جاری رہی۔

وکس 20 اوور کی پہلی گیند پر اونچی ساٹ کھیلتے ہوئے کیچ آؤٹ ہو گئے۔ اس کے فوری بعد ونس پر 46 پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

دونوں سہیل تنویر کی گیند پر عمل اکمل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

اننگز کی پہلی ہی گیند پر کامیابی حاصل کرنے کے بعد پاکستان نے فوری ہی دوسرے اوور میں دوسری وکٹ لینے کا موقع اس وقت کھو دیا جب سہیل تنویز اپنی گیند پر وینس کا کیچ لینے میں ناکام رہے۔

تین میچوں کی سیریز انگلینڈ دو، صفر سے پہلے ہی جیت چکا ہے۔

پہلے ٹی 20 میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو 14 رنز جبکہ دوسرے میچ میں ایک دلچسپ میچ کے بعد تین رنز سے پاکستان کو شکست دے کر ٹی ٹوئنٹی سیریز اپنے نام کر لی تھی۔

دوسرے میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو میچ جیتنے کے لیے 173 رنز کا ہدف دیا تھا۔

جواب میں پاکستان کی ٹیم مقررہ 20 اوورز میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 169 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

دبئی میں کھیلے جانے والے پہلے ٹی 20 میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو 14 رنز سے شکست دے تھی۔

انگلینڈ نے مقررہ 20 اوورز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 160 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں پاکستان کی پوری ٹیم 20 اوورز میں 146 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی

اسی بارے میں