سری لنکا میں میچ فکس کرنے کی کوشش کی انکوائری شروع

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption بک میکر نے سپن بولر رنگانا ہیراتھ اور وکٹ کیپر بیٹسمین کوشل پریرا سے رابطہ کیا تھا

سری لنکا میں حکام نے قومی کرکٹ ٹیم کے ویسٹ انڈیز کےخلاف انٹرنیشل میچ کو فکس کرنے کےلیے ایک مشتبہ بک میکر کی طرف سے سری لنکا کی ٹیم کے دو کھلاڑیوں سے رابطہ کرنے پر تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

سری لنکا کے وزیر کھیل دیاسری جیاسیکرا نے کہا کہ ایک مشتبہ بک میکر نے ویسٹ انڈیز کے خلاف ایک انٹرنیشنل میچ سے قبل دوکھلاڑیوں سے رابطہ کیا اور انھیں میچ فکس کرنے پر قائل کرنے کی کوشش کی۔

سری لنکا کے وزیر کھیل کے مطابق بک میکر نے سری لنکا کے سٹار بولر رنگانا ہیراتھ سمیت دو کھلاڑیوں کواپنی صلاحیت سے کم کارکردگی دکھانے پر مائل کرنے کی کوشش کی۔

وزیر نے کہا کہ دونوں کھلاڑیوں نے بک میکر کی پیشکش کو ٹھکرا دیا اور اس پیشکش کے بارے میں حکام کو بھی مطلع کیا۔ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کو بھی میچ فکسنگ کی اس کوشش کے بارے میں بتایا جا چکا ہے۔

سری لنکا اس میچ میں فاتح رہا تھا۔

وزیر کھیل جیاسیکرا نے اکتوبر میں کولمبو کے میدان گال میں کھیلے جانے والے میچ کے شروع ہونے سے کچھ دیر پہلےایک بک میکر نے سپن بولر رنگانا ہیراتھ اور وکٹ کیپر بیٹسمین کوشل پریرا سے رابطہ کیا اور انھیں میچ میں اپنی صلاحیت سے کم کھیل پیش کرنے پر مائل کرنے کی کوشش کی۔

وزیر کھیل نے بتایا کہ کوشل پریرا کی طرف سے پیشکش کو رد کیے جانے کے بعد اس نے رنگانا ہیراتھ سے رابطہ کیا۔ رنگانا ہیراتھ نے نہ صرف اس پیشکش کو مسترد کیا بلکہ اس کے بارے میں حکام کو بھی مطلع کیا۔

وزیر کھیل جیاسیکرا نے بتایا کہ سری لنکا کرکٹ بورڈ اور پولیس اس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔