ڈربن ٹیسٹ: ابتدائی نقصان کے بعد انگلینڈ کی بہتر بیٹنگ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption نک کومپٹن نے پہلے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگز میں ایک مشکل وقت پر نصف سنچری سکور کی

ڈربن میں جنوبی افریقہ اور انگلینڈ کے درمیان چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے نک کومپٹن اور جیمز ٹیلر کی نصف سنچریوں کی بدولت چار وکٹوں کے نقصان پر 179 رنز بنائے تھے۔

بارش سے متاثر ہونے والے اس ٹیسٹ میچ کے پہلے دن جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا اور آغاز سے ہی انگلینڈ کی ٹیم پر دباؤ میں ڈالے رکھا۔

تفصیلی سکور کارڈ

ہیلز جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ کریئر کا آغاز کریں گے

جمعے کو جب میچ کے پہلے دن کے کھیل کا اختتام ہوا تو انگلینڈ کی جانب سے نک کومپٹن 63 اور بین سٹوکس پانچ رنز پر کھیل رہے تھے۔

اس سے قبل انگلینڈ نے جب اپنی پہلی اننگز کا آغاز کیا تو صرف 49 رنز پر اس کی تین وکٹیں گر چکی تھیں۔

کپتان ایلسٹر کک صفر، اپنا پہلا ٹیسٹ میچ کھیلنے والے ایلکس ہیلز دس اور جو روٹ 24 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ڈیل سٹین نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کیا اور دونوں اوپنرز کو جلد آؤٹ کرنے میں کامیاب ہوئے

تاہم بعد میں نک کومپٹن اور جیمز ٹیلر نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی ٹیم کو مشکلات سے نکالنے کی بھرپور کوشش کی۔

دونوں نوجوان بلے بازوں نے چوتھی وکٹ کی شراکت میں 125 رنز بنائے اور اپنی اپنی نصف سنچری بھی مکمل کرنے میں کامیاب ہوئے۔ٹیلر 70 رنز کی عمدہ اننگز کھیلنے کے بعد ڈیل سٹین کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے ڈیل سٹین تین وکٹیں حاصل کر کے نمایاں بولر رہے۔

بارش اور بعد میں خراب روشنی کے باعث پہلے دن صرف 65.1 اوورز کا کھیل ہی ممکن ہو سکا جس مطلب یہ ہوا کہ اتوار کو میچ کے دوسرے دن کا کھیل آدھا گھنٹہ پہلے شروع کیا جائے گا۔

اسی بارے میں