ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر یاسر شاہ کو معطل کردیا گیا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption یاسر شاہ کا ڈوپ ٹیسٹ 13 نومبر 2015 کو لیا گیا تھا

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اعلان کیا ہے کہ پاکستانی بولر یاسر شاہ کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس کے بعد انھیں عبوری طور پر معطل کر دیا گیا ہے۔

ان کا ڈوپ ٹیسٹ 13 نومبر 2015 کو لیا گیا تھا۔

اتوار کو آئی سی سی کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق یاسرشاہ کے ڈوپ ٹیسٹ میں کلورٹالیڈون نامی عنصر سامنے آیا جو واڈا کے قوانین کے مطابق ایک ممنوع دوا ہے۔

مثبت ڈوپنگ ٹیسٹ: رضا حسن کی اپیل واپس

’سزا یافتہ کرکٹرز کا ڈوپ ٹیسٹ کرایا جائے‘

مثبت ڈوپ ٹیسٹ، پاکستانی کرکٹر پر پابندی

جس کے بعد آئی سی سی کے انٹی ڈوپنگ کوڈ کے تحت یاسر شاہ کو عبوری طور پر معطل کر دیا گیا ہے۔

آئی سی سی کے مطابق اب یہ معاملہ آئی سی سی کے انٹی ڈوپنگ کوڈ کے تحت دیکھا جائے گا، اور اس وقت تک آئی سی سی اس معاملے پر مزید کوئی تبصرہ نہیں کرے گا۔

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں نیوزی لینڈ میں 25 سالہ سری لنکن کھلاڑی کوشل پریرا کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آیا تھا جس کے بعد انھیں واپس سری لنکا بھیج دیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ ماضی میں پاکستان کے ٹیسٹ کرکٹرز شعیب اختر، محمد آصف اور عبدالرحمان پر مثبت ڈوپ ٹیسٹ کی وجہ سے پابندی عائد ہو چکی ہے۔

شعیب اختر اور محمد آصف 2006 میں مثبت ڈوپ ٹیسٹ کی پاداش میں پابندی کا سامنا کر چکے ہیں۔

شعیب اختر پر دو سال کی اور محمد آصف پر ایک سال کی پابندی لگائی گئی تھی تاہم بعد میں دونوں بولروں کی اپیل پر پابندی ہٹا دی گئی۔

اسی بارے میں