ال سلواڈور کے فٹبالر کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گيا

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption پاشیکو مرکز میں نظر آ رہے ہیں انھوں نے ملک کی جانب سے 86 میچز میں حصہ لیا ہے

ال سلواڈور کے حکام کا کہنا ہے کہ سابق فٹ بالر الفریڈ پاشیکو کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا ہے۔

ہونڈورس کا فٹبالر آبائی شہر میں قتل

دارالحکومت سان سلواڈور کے مشرق میں 76 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع شہر سانتا آنا کے پیٹرول سٹیشن پر ایک شخص نے 33 سالہ پاشیکو کو کئی گولیاں ماریں۔

پولیس کے مطابق حملے میں دو دیگر افراد بھی زخمی ہوئے ہیں جبکہ حملے کا مقصد جاننے کے لیے تحقیقات جاری ہیں۔

حملے کا نشانہ بننے والے ال سلواڈور کے کھلاڑی پر سنہ 2013 میں میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کی وجہ سے تاحیات پابندی عائد کردی گئی تھی۔ وہ ملک کی جانب سے سب سے زیادہ میچ کھیلنے والے کھلاڑی تھے۔

وہ ڈیفنڈر کی حیثیت سے کھیلا کرتے تھے۔

پاشیکو اور قومی ٹیم کے دیگر 13 ممبران سنہ 2010 سے 2013 کے درمیان بیشتر میچوں کو ہارنے کے لیے رشوت لینے کے جرم میں ملوث پائے گئے تھے۔

کئی سالوں سے وسطی امریکہ کے چھوٹے سے ملک ال سلواڈور کا شمار دنیا میں سب سے زیادہ جرائم کی شرح والے ممالک میں ہو رہا ہے۔

اسی ماہ کے اوئل میں وسطی امریکہ کے ہی ملک ہونڈورس میں ایک 26 سالہ عالمی فٹبالر آرنلڈ پیرالتا کو چھٹی کے دن ان کے آبائی شہر میں گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔

اسی بارے میں