علیم ڈار ٹیسٹ میچوں کی سنچری مکمل کرنے کے قریب

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption علیم ڈار سنیچر کے روز جنوبی افریقہ اور انگلینڈ کے مابین ٹیسٹ میں اپنے 100ویں ٹیسٹ میچ میں امپائرنگ کریں گے

پاکستانی امپائر علیم ڈار کا شمار رواں ہفتے دنیا کے ان تین امپائروں میں ہوگا جنھوں نے سو یا اس سے زیادہ ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کے فرائض سرانجام دیے ہوں۔

علیم ڈار اس وقت جنوبی افریقہ اور انگلینڈ کے مابین جاری سیریز میں امپائرنگ کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ وہ اب تک 99 ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کر چکے ہیں اور سنیچر کے روز نیولینڈز میں کھیلے جانے والا دوسرا ٹیسٹ ان کا سواں ٹیسٹ میچ ہو گا۔

آئی سی سی کے ایک بیان کے مطابق دنیا میں سٹیو بکنر اور روڈی کرٹزن دو ایسے امپائر ہیں جنھوں نے سو سے زیادہ ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کے فرائض دیے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption علیم ڈار 99 ٹیسٹ میچوں کے علاوہ 178 ایک روزہ میچوں اور 35 ٹی 20 میچوں میں بھی امپائرنگ کر چکے ہیں

47 سالہ علیم ڈار پچھلے 12 برسوں سے امپائرنگ کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ علیم ڈار نے اپنی امپائرنگ کا آغاز سنہ 2000 میں گوجرانوالا میں پاکستان اور سری لنکا کے مابین ایک روزہ میچ سے کیا تھا اور تین سال بعد 2003 میں بنگلہ دیش اور انگلینڈ کے مابین ٹیسٹ میچ سے ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کا آغاز کیا تھا۔

علیم ڈار اب تک 99 ٹیسٹ میچوں، 178 ایک روزہ میچوں اور 35 ٹی 20 میچوں میں امپائرنگ کر چکے ہیں۔

علیم ڈار کو کرکٹ کی دنیا میں انتہائی عزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ وہ 2009 ,2010 اور 2011 میں آئی سی سی کے امپائر آف دی ایئر کا اعزاز پا چکے ہیں۔ علیم ڈار کو 2013 میں پاکستان کے تیسرے بڑے قومی اعزاز ستارہ امتیاز سے نواز گیا ہے۔

ٹیسٹ میچوں کی سنچری مکمل کرنے کے سنگ میل کے قریب پہنچنے پر علیم ڈار نے کہا کہ میں اس سنگ میل کے قریب پہنچنے پر بہت خوش اور فخر محسوس کرتا ہوں۔ انھوں نے کہا کہ یہ حیران کن ہے کہ وقت کتنی جلدی سے بیت گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ویسٹ انڈیز سے تعلق رکھنےوالے سٹیو بکنر نے سب سے زیادہ 128 میچوں میں امپائرنگ کی ہے

انھوں نے کہا کہ وہ پاکستان کرکٹ بورڈ اور انٹرنیشنل کرکٹ بورڈ کی طرف سے ملنے والی تمام مدد کے انتہائی شکرگزار ہیں۔

علیم ڈار کا شمار ان پانچ امپائروں میں ہوتا ہے جنھوں نے 90 سے زیادہ ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کی ہے۔ ان میں سٹیو بکنر، 128، روڈی کرٹزن 108، علیم ڈار 99، ڈیرل ہارپر 95، اور ڈیوڈ شیپرڈ 92 ٹیسٹ شامل ہیں۔

اسی بارے میں