آسٹریلیا کے خلاف بھارت کو مسلسل تیسری شکست

Image caption گلین میکسویل نے فتح گر اننگز کھیلی لیکن میچ کے آخری اوور میں وہ سینچری مکمل کرنے کی کوشش میں آؤٹ ہو گئے

میلبرن میں بھارت کے خلاف کھیلی جانے والی ایک روزہ میچوں کی سیریز کے تیسرے میچ میں آسٹریلیا نے بھارت کے 295 رنز کا کامیابی سے تعاقب کرتے ہوئے فتح حاصل کر لی ہے۔

بھارت نے مقررہ 50 اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 295 رنز بنائے اور آسٹریلیا کو جیت کے لیے 296 رنز کا ہدف دیا، جس کے جواب میں آسٹریلیا نے سات گیندیں قبل ہی سات وکٹوں کے نقصان پر مطلوبہ ہدف حاصل کر لیا۔

میچ کا سکور کارڈ جاننے کے لیے کلک کریں

آسٹریلیا کی جانب سے گلین میکسویل نے 96 رنز کی فتح گر اننگز کھیلی۔ میچ کے آخری اوور میں وہ سینچری مکمل کرنے کی کوشش میں یادو کی گیند پر شیکھر دھون کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

ان کے علاوہ اوپنر شان مارش نے بھی 62 رنز کی اننگز اچھی کھیلی، جب کہ کپتان سٹیون سمتھ نے اپنی بھرپور فارم کا فائدہ اٹھاتے ہوئے 41 رنز بنائے۔

بھارت کی جانب سے شکھر دھون اور روہت شرما نے اننگز کا آغاز کیا تو ابتدائی دو ایک روزہ میچوں میں سنچری سکور کرنے والے روہت شرما صرف چھ رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وراٹ کوہلی اور شکھر دھون نے نصف سنچریاں سکور کیں

شکھر دھون اور وراٹ کوہلی نے دوسری وکٹ کی شراکت میں 119 رنز بنائے اور دونوں بلے باز اپنی اپنی نصف سنچریاں سکور کیں۔ اس کے بعد رہانے اور کوہلی کے درمیان 109 رنز کی شراکت ہوئی۔ رہانے 50 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

کوہلی 117 رنز بناکر آؤٹ ہوئے جبکہ کپتان مہندر سنگھ دھونی نے نو گیندوں پر 23 رنز بنائے۔

وراٹ کوہلی اسی میچ میں ایک روزہ میچوں میں سب سے تیز سات ہزار رنز مکمل کرنے والے کھلاڑی بھی بن گئے ہیں۔ انھوں نے یہ سنگ میل 169 میچوں میں عبور کیا۔

اس سے قبل جنوبی افریقہ کے اے بی ڈی ویلیئرز نے یہ کارنامہ 172 میچز کی 166 اننگز میں انجام دیا تھا۔

بھارت کی جانب سے دو نئے کھلاڑی ایک روزہ میچوں میں پہلی بار بھارت کی نمائندگی کر رہے ہیں۔ آل راؤنڈر رشی دھون اور میڈیم فاسٹ بولر گرکریت سنگھ کو ٹیم میں شامل کیا گيا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption آسٹریلیا کی جانب سے رچرڈسن نے پہلی وکٹ حاصل کی

اس سے قبل بھارت کو دونوں ون ڈے میچوں میں پہلے بلے بازی کرتے ہوئے شکست کا سامنا رہا ہے۔

پرتھ میں کھیلے جانے والے پہلے میچ میں آسٹریلیا کو پانچ وکٹوں سے کامیابی ملی تھی۔

جبکہ سڈنی میں کھیلے جانے والے دوسرے میچ میں اس نے بھارت کو سات وکٹوں سے ہرایا تھا۔ بھارت نے دونوں میچوں میں تین سو سے زیادہ سکور کیے تھے۔

اسی بارے میں