پاکستان کو پہلے ون ڈے میں 70 رنز سے شکست

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

ایک روزہ کرکٹ میچوں کی سیریز کے پہلے میچ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کو 70 رنز سے شکست دی ہے۔

نیوزی لینڈ نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے پاکستان کو 281 رنز کا ہدف دیا جس کے تعاقب میں پاکستان نے 210 رنز بنا کر ڈھیر ہو گئی۔

پاکستان کی جانب سے محمد حفیظ اور بابر اعظم کے درمیان واحد پارٹنر شپ رہی۔ محمد حفیظ اور بابر اعظم نے مل کر 81 رنز کا اضافہ کیا۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

میچ کی تصاویر

نویں اوور میں پاکستان کو پہلا نقصان اٹھانا پڑا جب کپتان اظہر علی نے اونچی شاٹ کھیلی اور کیچ آؤٹ ہوئے۔ انھوں نے 19 رنز سکور کیے اور ان کی وکٹ ایلیئٹ نے حاصل کی۔

11 ویں اوور میں پاکستان کی دوسری وکٹ گری۔ احمد شہزاد 11 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔ احمد شہزاد کو بھی ایلیئٹ نے آؤٹ کیا۔

محمد حفیظ نے 56 گیندوں میں 42 رنز سکور کیے اور ان کو ولیمسن نے آؤٹ کیا۔

پاکستان کی چوتھی وکٹ 142 رنز پر گری جب صہیب مقصود ایک بار پھر اچھا کھیل پیش نہ کرسکے اور 10 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔

بابر اعظم نے عمدہ کھیلتے ہوئے 60 گیندوں میں پانچ چوکوں کی مدد سے نصف سنچری مکمل کی۔ ان کو اینڈرسن نے 62 کے انفرادی سکور پر آؤٹ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption میٹ ہنری نے وہاب ریاض کو ایک ہی اوور میں تین چھکے لگائے

عماد وسیم جلد ہی پویلین لوٹ گئے جب ان کو سینٹنر نے ایک رن پر آؤٹ کیا۔

سرفراز احمد نے 28 گیندوں میں 0 رنز بنائے اور ان کو بولٹ نے آؤٹ کیا۔

سرفراز کے بعد انور علی بھی جلد آؤٹ ہو گئے۔ انھوں نے 11 رنز بنائے۔

محمد عامر محمد عرفان دونوں صفر پر بولڈ ہوئے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے بولٹ نے چار اور ایکیئٹ نے تین وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے قبل ویلنگٹن میں پیر کو کھیلے جانے والے میچ میں پاکستانی کپتان اظہر علی نے ٹاس جیت کر میزبان ٹیم کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تو ابتدا میں پاکستانی بولروں نے شاندار بولنگ کی۔

ایک موقع پر نیوزی لینڈ کی چھ وکٹیں صرف 99 رنز پر گر گئی تھیں تاہم اس وقت ہنری نکولس نے مچل سینٹنر کے ساتھ مل کر ٹیم کو مشکلات سے نکالا۔

ان دونوں نے پاکستانی بولروں کا جم کر مقابلہ کیا اور ساتویں وکٹ کے لیے 79 رنز کی شراکت قائم کر دی۔

اس دوران ہنری نے نصف سنچری بنائی جبکہ سینٹنر 48 رنز کی اننگز کھیلنے میں کامیاب رہے جو ایک روزہ کرکٹ میں ان کا بہترین سکور ہے۔

اننگز کے آخر میں میٹ ہنری کی 30 گیندوں پر چار چھکوں اور چار چوکوں سے مزین 48 رنز کی جارحانہ اننگز نے نیوزی لینڈ کو ایک بڑے سکور تک پہنچنے میں مدد دی اور میزبان ٹیم آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 277 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption محمد عامر نے ٹام لیتھم کی وکٹ کے ساتھ ون ڈے کرکٹ میں واپسی کی

ہنری اور میکلینگن نے پاکستانی بولروں کی جم کر پٹائی کی اور آخری چھ اوورز میں 73 رنز بنائے۔

نیوزی لینڈ کی آخری چار وکٹوں نے مجموعی سکور میں 180 رنز کا اضافہ کیا۔

پاکستان کے لیے فاسٹ بولر محمد عامر اور انور علی نے تین، تین جبکہ محمد عرفان نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

سپاٹ فکسنگ پر پانچ سال کی پابندی کا سامنا کرنے والے پاکستانی فاسٹ بولر محمد عامر کا پاپندی کے خاتمے کے بعد یہ پہلا ون ڈے میچ تھا اور اپنے سپیل کے نویں اوور میں پٹھہ کھنچ جانے کی وجہ سے میدان سے باہر بھی چلے گئے۔

اسی بارے میں