لنکڈ اِن پر فٹبال کھلاڑی کی کامیاب تلاش

Image caption سپین کے دفا‏عی کھلاڑی 30 سالہ الوارو براکی کئي مختلف کلبوں کے لیے کھیل چکے ہیں

سلووینیا کے ایک فٹبال کلب این کے ڈوم زل نے اپنی ٹیم کے لیے ایک متبادل کھلاڑی تلاش کرنے کے لیے ایجنٹ کی فیس پر ایک پیسہ خرچ کیے بغیر انوکھا طریقہ اختیار کرتے ہوئے لنکڈ اِن ویب سائٹ کا استعمال کیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائیٹ لنکڈ اِن زیادہ تر نوکریوں کی تلاش کے لیے استعمال کی جاتی ہے اور برطانیہ میں اسے زیادہ تر نوکری پیشہ لوگ خاص طور پر وکلا اور اکاؤنٹنٹس استعمال کرتے ہیں۔

تاہم حال ہی میں ڈوم زل کے 33 سالہ ہیڈ کوچ لُوک ایلزنر کی جانب سے لنکڈ اِن پر ایک پیغام شائع کیا گیا تھا جس میں ایسے ’اوفینسِیو رائٹ بیک‘ پوزیشن کے کھلاڑيوں کے لیے درخواستیں طلب کی گئی تھیں جن کے پاس یورپی یونین کا پاسپورٹ ہونا ضروری تھا۔

فٹبال کلب کو جواب میں 150 درخواستیں موصول ہوئیں اور انھوں نے سپین کے دفا‏عی کھلاڑی 30 سالہ الوارو براکی کو تبادلے کی آخری تاریخ سے محض ایک دن قبل اپنے کلب میں شامل کر لیا۔

لنکڈ اِن پر اشتہار رواں برس سات جنوری کو پوسٹ کیا گیا تھا جسے دو فروری تک 232 بار دیکھا گیا، 10 لوگوں نے اسے پسند کیا جبکہ آٹھ لوگوں نے اس پر اپنی رائے کا اظہار کیا تھا۔

اس اشتہار کے جواب میں پروفیشنل فٹبالروں نے اپنے کھیل کی ویڈیوز بھی بھیجی تھیں تاکہ ایلزنر ان کا معائنہ کرکے پرکھ سکیں کہ کیا وہ ان کے ’بہت اوفینسیو 3-4-3 نظام‘ پر پورا اتر تے ہیں یا نہیں۔

سلووینیا کی فٹبال لیگ پروا لیگا میں این کے ڈوم زل نمبر ایک ٹیم اولمپیجا سے محض آٹھ پوائنٹس پیچھے ہے جبکہ لیگ میں وہ تیسرے نمبر پر ہیں۔ اس وقت لیگ میں موسم سرما کی چھٹیاں ہیں۔

رواں سال جنوری کے تبادلوں کے دوران انھوں نے اپنی ٹیم کے کپتان نیٹس سکووِک کو ترکی کے فٹبال کلب کونی یس پور کے ہاتھوں کھو دیا تھا۔

کلب کے رابطہ عامہ کے افسر گریگا کرماونار نے بی بی سی سپورٹس کو بتایا کہ ’این کے ڈوم زل کے پاس بجٹ اتنا زیادہ نہیں ہے۔ ہمارے پاس معروف اور مہنگے کھلاڑی خریدنے کے پیسے نہیں ہیں۔

’ہمیں متبادل کھلاڑی کی ضرورت تھی جو ہمیں سلووینیا میں نہیں مل رہا تھا۔ لنکڈ اِن پر اشتہار دینے کا خیال ہمارے ہیڈ کوچ لُوک ایلزنر کا تھا۔ جس پر ہم نے فیصلہ کیا کہ یہ ایک اچھا طریقہ ہوسکتا ہے اور اس کے بعد ایلزنر نے لنکڈ اِن کی ویب سائٹ پر اپنے پروفائل والے صفحے پر اشتہار پوسٹ کیا تھا۔‘

کلب میں شامل ہونے والے نئے کھلاڑي براکی کی درخواست میں سپین کے معروف کلب ریئل بیٹس، قبرص کے انورتھوسس اور ہنگری کے کلب ویڈیوٹن کے ساتھ کھیل کی ویڈیوز شامل تھیں۔

براکی آئی فٹبال کےگذشتہ دو سیزن کا باقاعدگی سے حصہ نہیں رہے ہیں۔

کرماونار کہتے ہیں کہ ’ہم نے بہترین امیدواروں کی ویڈیوز دیکھیں اور ان کا تجزیہ کیا تھا۔ براکی سب سے بہترین امیدوار تھے۔ ہم نے انھیں سلووینیا بلانے اور اپنی ساتھ تجرباتی بنیاد پر ایک ہفتے کے لیےتربیت دینے کا فیصلہ کیا جس کے بعد ہم نے انھیں باقاعدہ کلب میں شامل کر لیا ہے۔

’ہمیں ایسے کھلاڑی کی ضرورت تھی جو اس وقت کسی کنٹریکٹ کے تحت نہ ہو اور جو ماحول کی تبدیلی چاہتا ہو۔ ہمیں لگتا ہے کہ ہم معیاری کھلاڑی ڈھونڈنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔

’میرے خیال میں ہمارا کلب ایسا پہلا ہے جو اس طریقے ( لنکڈ اِن) سے کھلاڑی ڈھونڈنے میں کامیاب ہوا ہے۔‘

اسی بارے میں