شوماکر کی حالت کے بارے میں کچھ ’اچھی خبر نہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption دسمبر 2013 میں سکیئنگ کے دوران حادثے میں ان کے سر پر شدید چوٹیں آئی تھیں

جرمنی سے تعلق رکھنے والے فارمولا ون ڈرائیور مائیکل شوماکر کی فیراری ٹیم کے سابق سربراہ کا کہنا ہے کہ شوماکر کی حالت کے بارے میں حالیہ خبریں ’اچھی نہیں ہیں۔‘ تاہم انھوں نے اس بارے میں مزید کچھ بتانے سے انکار کر دیا۔

لوکا ڈی مونٹیزیمولو نے جمعرات کو صحافیوں کو بتایا کہ ’میرے پاس ایک خبر ہے اور بدقسمتی سے یہ اچھی نہیں ہے۔‘

جب بی بی سی نے مائیکل شوماکر کے ترجمان سبائن کیہم سے رابطہ کیا تو انھوں نے کوئی جواب دینے سے انکار کردیا ۔

لوکا ڈی مونٹیزیمولو کا کہنا تھا کہ ’زندگی عجیب ہے۔‘

’وہ ایک بہترین ڈرائیور تھے اور سنہ 1999 میں فیراری کے ساتھ ان کا صرف ایک حادثہ ہوا تھا۔‘

خیال رہے کہ 47 سالہ شوماکر سات بار عالمی چیمپیئن رہ چکے ہیں اور 2012 میں انھوں نے دوسری بار ریٹائرمنٹ لی تھی۔

دسمبر 2013 میں سکیئنگ کے دوران کے پیش آنے والے حادثے میں ان کے سر پر شدید چوٹیں آئی تھیں۔ فرنچ ایلپس کے پہاڑی سلسلے میں واقع ایک الپائن ریزورٹ میں سکیئنگ کے دوران ان کا سر ایک چٹان سے ٹکرا گیا تھا۔

فرانس میں ہونے والی اس حادثے کے بعد سوئٹزرلینڈ میں اب بھی وہ اپنے گھر میں انتہائی نگہداشت کی حالت میں ہیں۔

گذشتہ سال نومبر میں اس حادثے کے تقریباً دو سال کے عرصہ کے بعد آیف آئی اے کے صدر جین ٹوڈ کا کہنا تھا کہ شوماکر ’تاحال لڑ رہے ہیں۔‘

اسی بارے میں