برینڈن مکلم کی آخری ٹیسٹ میں تیز ترین سنچری

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

کرائسٹ چرچ میں نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن برینڈن مکلم نے ٹسیٹ کرکٹ کی تیز ترین سنچری کا ریکارڈ اپنے نام کر لیا ہے۔

اپنا آخری ٹیسٹ میچ کھیلنے والے برینڈن مکلم نے تیز ترین سنچری کا ریکارڈ 54 گیندوں پر چار چھکوں اور 16 چوکوں کی مدد سے بنایا۔

آسٹریلیا نے دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا تو صرف 74 رنز پر نیوزی لینڈ کے چار کھلاڑی آوٹ ہو گئے تھے۔

اس کے بعد برینڈن مکلم نے انتہائی جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے کوری اینڈرسن کے ساتھ پانچویں وکٹ کی شراکت میں 179 رنز بنائے۔ مکلم 79 گیندوں پر چھ چھکوں اور 21 چوکوں کی مدد سے 145 رنز کی اننگز کھیلی۔ انھیں پیٹنسن نے آؤٹ کیا۔

برینڈن مکلم کو ایک موقع اس وقت ملا جب 39 رنز پر مچل مارش نے ان کا کیچ پکڑا لیکن بعد میں ٹی وی امپائر نے اسے نو بال قرار دیا۔

34 سالہ برینڈن مکلم نے اس سیریز سے قبل کہا تھا کہ آسٹریلیا کے خلاف ہونے والی ٹیسٹ سیریز ان کے کریئر کی آخری سیریز ہو گی۔

اس سے مصباح الحق نے آسٹریلیا ہی کے خلاف ابو ظہبی ٹیسٹ میچ میں تیز ترین ٹیسٹ سنچری کا ریکارڈ برابر کر دیا تھا۔

مصباح الحق نے صرف 56 گیندوں پر سنچری مکمل کرتے ہوئے ویسٹ انڈیز کے ویوین رچرڈز کا 28 سالہ ریکارڈ برابر کیا تھا۔ جو انھوں نےسنہ 1986 میں انگلینڈ کے خلاف انٹیگا میں قائم کیا تھا۔

نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلی جانے والی دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں آسٹریلیا کو پہلے ہی ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

ویلنگٹن میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا نے نیوزی لینڈ کو اننگز اور 52 رنز سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں