کرائسٹ چرچ ٹیسٹ میں نیوزی لینڈ مشکلات سے دوچار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آسٹریلیا کی جانب سے پیٹنسن کے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا

کرائسٹ چرچ میں نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر نیوزی لینڈ نے چار وکٹوں کے نقصان پر121 رنز بنائے تھے جبکہ اسے اننگز کی شکست سے بچنے کے لیے مزید 14 رنز کی ضرورت ہے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

نیوزی لینڈ کی دوسری اننگز کا آغاز اچھا نہ تھا اور گپٹل بغیر کوئی رن بنائے پیٹنسن کے ہاتھوں آؤٹ ہوگئے۔ دیگر کھلاڑی میں نکولس دو، لیتھم 39 اور میک کلم 25 رنز بنا سکے۔

آسٹریلیا کی جانب سے پیٹنسن کے تین جبکہ ہیزلووڈ نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

تیسرے روز کا کھیل جب ختم ہوا تو ولیمسن 45 اور کورے اینڈرسن 25 رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے۔

پیر کو ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز آسٹریلیا نے 363رنز چار کھلاڑی آوٹ پر اپنی پہلی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا اور اس کی پوری ٹیم 505 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

اس طرح آسٹریلیا کو نیوزی لینڈ پر 135 رنز کی برتری حاصل ہوگئی تھی۔

آسٹریلیا کی جانب سے برنز 170 اور سمتھ138 رنز کے ساتھ نمایاں رہے جبکہ نیوی لینڈ کی طرف سے ویگنر نے چھ، بولٹ نے دو اور اینڈرسن اور ولیمسن نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption برینڈن مک کلم نے اس سیریز سے قبل کہا تھا کہ یہ ٹیسٹ سیریز ان کے کریئر کی آخری سیریز ہو گی

اس سے قبل آسٹریلیا نے دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا برینڈن میک کلم نے انتہائی جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے کوری اینڈرسن کے ساتھ پانچویں وکٹ کی شراکت میں 179 رنز بنائے۔ مک کلم 79 گیندوں پر چھ چھکوں اور 21 چوکوں کی مدد سے 145 رنز کی اننگز کھیلی۔

34 سالہ برینڈن مک کلم نے اس سیریز سے قبل کہا تھا کہ آسٹریلیا کے خلاف ہونے والی ٹیسٹ سیریز ان کے کریئر کی آخری سیریز ہو گی۔

نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلی جانے والی دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں آسٹریلیا کو پہلے ہی ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

ویلنگٹن میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا نے نیوزی لینڈ کو اننگز اور 52 رنز سے شکست دی تھی

اسی بارے میں