احمد شہزاد پاکستان کے ٹی 20 سکواڈ میں شامل

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption احمد شہزاد پاکستان کی طرف سے ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچوں میں سنچری بنانے والے واحد بلے باز ہیں

پاکستان کرکٹ بورڈ نے اوپنر احمد شہزاد کو بھارت میں رواں ماہ کھیلے جانے والے آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کے لیے پاکستانی سکواڈ میں شامل کر لیا ہے۔

انھیں خرم منظور کی جگہ ٹیم کا حصہ بنایا گیا ہے جن کی ایشیا کپ میں کارکردگی ناقص رہی تھی۔

خرم منظور کو قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ میں 309 رنز بنانے کی عمدہ کارکردگی کی بنیاد پر پاکستانی ٹیم میں شامل کیا گیا تھا لیکن وہ ایشیا کپ کے تین میچوں میں بالترتیب دس، صفر اور ایک رن بنا سکے۔

احمد شہزاد پاکستان کی طرف سے ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچوں میں سنچری بنانے والے واحد بلے باز ہیں۔

تاہم 2014 کے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں بنگلہ دیش کے خلاف سنچری کے بعد سے وہ پندرہ اننگز میں صرف ایک نصف سنچری سکور کر سکے ہیں اور اسی مایوس کن کارکردگی کے سبب انھیں ایشیا کپ اور ورلڈ ٹی ٹوئنٹی سکواڈ سے ڈراپ کر دیا گیا تھا۔

احمد شہزاد کی ٹیم میں واپسی اس لحاظ سے بھی حیران کن ہے کہ دس فروری کو ٹیم سے ڈراپ کیے جانے کے بعد وہ پاکستان سپر لیگ کے آخری چھ میچوں میں بھی صرف ایک نصف سنچری بنا سکے تھے۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ وقاریونس ٹیم میں اوپنر سلمان بٹ کی شمولیت کے خواہاں تھے لیکن کپتان شاہد آفریدی اور چیئرمین شہریارخان کی مخالفت کے سبب یہ ممکن نہ ہو سکا۔

سلمان بٹ سپاٹ فکسنگ کی پاداش میں پانچ سالہ پابندی کے بعد فرسٹ کلاس کرکٹ میں واپس آئے ہیں تاہم واپسی کے بعد سے وہ صرف ون ڈے ٹورنامنٹ ہی کھیلے ہیں۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں اپنا پہلا میچ 16 مارچ کو کوالیفائر ٹیم کے خلاف کولکتہ میں کھیلے گی تاہم اس کی ایونٹ میں شرکت کا انحصار حکومتی اجازت پر ہے۔

اسی بارے میں