موہالی کے میدان میں پاکستان کا نیوزی لینڈ سے سامنا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption آفریدی کا کہنا تھا کہ موہالی میں کنڈیشنز پاکستان اور نیوزی لینڈ دونوں کے لیے برابر ہیں

ورلڈ ٹی 20 کے سپر 10 مرحلے میں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان میچ منگل کو موہالی میں کھیلا جانے والا ہے۔

پاکستانی ٹیم جس نے بنگلہ دیش کے خلاف پہلا میچ بڑے اعتماد سے جیتا تھا انڈیا سے شکست کے بعد اب اس پوزیشن میں ہے کہ اسے سیمی فائنل تک رسائی یقینی بنانے کے لیے نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے خلاف میچز جیتنے ہیں۔

نیوزی لینڈ نے سپر ٹین مرحلے میں آسٹریلیا اور انڈیا کو شکست دے کر مسلسل دو کامیابیاں حاصل کی ہیں اور اس وقت اپنے گروپ میں پہلے نمبر پر ہے۔

نیوزی لینڈ کے خلاف میچ سے ایک روز قبل پاکستان ٹیم کو بڑا دھچکہ اس وقت لگا جب ان فارم بلے باز محمد حفیظ پنڈلی میں چوٹ کے باعث میچ میں شرکت سے محروم ہوگئے۔

بی بی سی کے نامہ نگار عبدالرشید شکور سے بات کرتے ہوئے پاکستان ٹیم کے مینیجر انتخاب عالم نے بتایا کہ محمد حفیظ موہالی میں ٹیم پریکٹس کے دوران زخمی ہوئے۔

انتخاب عالم نے مزید بتایا کہ وہاب ریاض کو بھی پریکٹس کے دوران گردن پر شعیب ملک کی جانب سے پھینکی جانے والی تھرو لگی تھی۔ تاہم ان کے مطابق وہاب ریاض کا سکین تھیک آیا ہے اور وہ اب فٹ ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption نیوزی لینڈ نے سپر ٹین مرحلے میں آسٹریلیا اور انڈیا کو شکست دے کر مسلسل دو کامیابیاں حاصل کی ہیں

دوسری جانب پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی تسلیم کرتے ہیں کہ انڈیا کے خلاف میچ میں غلطیاں سرزد ہوئیں لیکن وہ ٹیم پر کی جانے والی تنقید کو ایک جانب رکھتے ہوئے نیوزی لینڈ کے خلاف میچ پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں جو ان کے لیے بہت زیادہ اہمیت رکھتا ہے۔

آفریدی کا کہنا تھا کہ موہالی میں کنڈیشنز پاکستان اور نیوزی لینڈ دونوں کے لیے برابر ہیں لہٰذا یہ کہنا درست نہیں کہ نیوزی لینڈ کی ٹیم کو یہاں سبقت حاصل رہے گی۔

جبکہ نیوزی لینڈ کے کوچ مائک ہیسن کہتے ہیں کہ پاکستانی ٹیم ناقابل اعتبار مگر مہارت سے بھری ہوئی ہے اور اس کی سب سے بڑی خوبی اس کا لیفٹ آرم پیس اٹیک ہے جس میں بہت ورائٹی موجود ہے اور اس کا مقابلہ کرنا ایک چیلنج ہے۔

نیوزی لینڈ اور پاکستان کے درمیان اب تک 14 ٹی 20 میچز کھیلے جاچکے ہیں جن میں پاکستان نے آٹھ اور نیوزی لینڈ نے چھ میں فتح حاصل کی تھی۔

اسی بارے میں