ویسٹ انڈین آف سپنر سنیل نارائن کا بولنگ ایکشن کلیئر

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’امپائرز کو اگر بولنگ ایکشن پر دوبارہ شک ہو تو وہ پھر رپورٹ کر سکتے ہیں‘

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل آئی سی سی نے ویسٹ انڈیز کے آف سپنر سنیل نارائن کے بولنگ ایکشن کو درست قرار دے دیا ہے۔

پابندی کے خاتمے کے بعد اب نارائن بین الاقوامی کرکٹ میچوں میں دوبارہ بولنگ کر سکیں گے۔

* سنیل نارائن کو بولنگ سے روک دیا گیا

گذشتہ برس نومبر میں نارائن کا ایکشن سری لنکا کے خلاف پالیکیلے میں کھیلے جانے والے تیسرے ایک روزہ میچ میں رپورٹ کیا گیا تھا۔

بائیومکینک تجزیے میں نارائن کا بازو قوائد کے مطابق دیے گئے 15 ڈگری زاویے سے تجاوز کرنے پر آئی سی سی نے انھیں فوری طور پر بین الاقوامی کرکٹ میں بولنگ کرنے سے روک دیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

جمعرات کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے ایک بیان میں کہا کہ’سنیل نارائن نے اپنی بونگ ایکشن کو بہتر کیا ہے۔ چنئی میں منظور شدہ لیبارٹری میں جب نارائن کے ایکشن کا دوبارہ ٹیسٹ کیا گیا تو یہ پایا گیا کہ ان کی کہنی آئی سی سی کی جانب سے طے معیار کے تحت 15 ڈگری کے اندر ہی مڑ رہی تھی۔‘

لیکن آئی سی سی نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ اگر امپائروں کو مستقبل میں سنیل نارائن کے ایکشن پر کوئی شک ہوتا ہے تو وہ اس کی شکایت کر سکتے ہیں۔

گذشتہ کچھ عرصے سے آئی سی سی نے بولنگ ایکشن سے متعلق قواعد و ضوابط پر سختی سے عمل کرنا شروع کیا ہے۔

پاکستان کے آف سپنر محمد حفیظ پر بھی غیر قانونی بولنگ ایکشن کی وجہ بولنگ کرانے پر پابندی ہے جبکہ اس سے پہلے سعید اجمل پر بھی پابندی عائد کی گئی تھی تاہم بعد میں ایکشن بہتر ہونے پر پابندی ختم کر دی گئی تھی۔

اسی بارے میں