انگلش کرکٹ بورڈ کک کے ہیلمٹ سے پریشان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ نے ٹیسٹ ٹیم کے کپتان ایلسٹر کک کی جانب سے کاونٹی میچ میں ایسا ہیلمٹ پہننے جو بورڈ کے ضوابط سے مطابقت نہیں رکھتا، پر باز پرس کی ہے۔

حال ہی انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے ہر بیٹسمین کے لیے ایک مخصوص طرز کا ہیلمٹ پہننے کو لازمی قرار دیا ہے۔

اایلسٹر کک نے کلوسٹرشائر کے خلاف کھیلتے ہوئے ایسی ہیلمٹ پہنی جس کی گریل کو ایڈجسٹ کیا جا سکتا ہے۔

انگلش کرکٹ بورڈ نے نئے ضوابط فاسٹ بولر سٹورٹ براڈ اور وکٹ کیپرگریگ کیزویٹر کوگیند لگنے سے زخمی ہونے کے بعد ہیلمٹ سے متعلق قواعد تبدیل کیے ہیں۔

اگر ایلسٹر کک نے وہی ہیلمٹ پہننے پر اصرار کیا تو ان کی سرزنش بھی ہو سکتی ہے۔

بورڈ کی طرف سے تمام ایمپائروں کو ہدایت کی دی گئی ہیں کہ وہ کسی بھی ایسے کھلاڑی کو کھیلنے سے روک سکتے ہیں جس کا ہیلمٹ بورڈ کے ضوابط کے مطابقت نہ رکھتا ہو۔ ایمپائر ایسے کھلاڑیوں کی ڈسپلن کی خلاف ورزی کی شکایت بھی کر سکتے ہیں۔

ایلسٹر کک مئی میں سری لنکا کے خلاف سیریز سے پہلے ایسکس کاؤنٹی کی جانب سے چار کاونٹی میچ کھیل رہے ہیں۔

ایلسٹر کک کے ساتھی کھلاڑی روی بوپارا نے سکائی سپورٹس سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیٹسمینوں کے لیے نئے ہیلمٹ سے مانوس ہونا آسان نہیں ہے اور نئے ہیلمٹ میں کھلاڑیوں کو گیند دیکھنے میں کم وقت ملتا ہے جو فیصلہ کن ثابت ہو سکتا ہے۔

اسی بارے میں