یونان میں اولمپکس مشعل روشن کر دی گئی

یونان میں اولمپکس کی جائے پیدائش اولمپیا شہر میں منعقد ہونے والی ایک تقریب میں برازیل اولمپک گیمز سنہ 2016 کے لیے جنوبی یونان میں مشعل روشن کر دی گئی ہے۔

قدیم یونانی لباس میں ملبوس اداکارہ کیٹرینا لیہو نے سورج کی کرنوں کا استعمال کرتے ہوئے مشعل جلائی۔

اولمپک ٹارچ کو مختلف ایتھلیٹ ایک بین الااقوامی ریلے دوڑ میں لے کر جائیں گے جہاں ریو ڈی جینرو میں پانچ اگست کو ہونے والی افتتاحی تقریب میں اس کے سفر کا اختتام ہو گا۔

اولمپک گیمز کے لیے مشعل روشن کرنے کی رسم 80 سال قبل برلن گیمز کے انعقاد کے موقعے پر شروع ہوئی تھی۔ یونان کے قدیم شہر اولمپیا میں یہ کھیل ایک ہزار سال تک منعقد ہوتے رہے ہیں۔

اداکارہ کیٹرینا لیہو نے جمعرات کو ہونے والی ایک تقریب میں مشعل روشن کرنے کے بعد روشنی اور موسیقی کے قدیم یونانی دیوتا اپولو کے سامنے عبادت کی۔

کیٹرینا لیہو نے اس کے بعد اس شمع کو یونان کے جمناسٹک چیمپئین ایلفتھیریوس پیٹرونیاس کے سپرد کیا جو اس ریلے دوڑ کے پہلے رنز ہوں گے۔

انٹرنیشنل اولمپکس کمیٹی کا کہنا ہے کہ اب یہ مشعل چھ دن تک یونان کے اندر سفر کرے گی جس کے بعد یہ تین مئی کو برازیل پہنچے گی۔

انٹرنیشنل اولمپکس کمیٹی کے مطابق برازیل پہنچنے کے بعد یہ مشعل 100 دن کے دوران 500 شہروں اور دیہات کا سفر کرے گی۔

اسی بارے میں