ڈیرن سیمی کو اعزازی شہریت دی جائے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ڈیرن سیمی مشکل سے مشکل وقت میں بھی مسکراتے رہتے ہیں

ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کی فاتح ویسٹ انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان ڈیرن سیمی کو پاکستان کی اعزازی شہریت دینے کی درخواست کی گئی ہے۔

یہ درخواست پاکستان سپر لیگ میں حصہ لینے والی پشاور زلمی کے مالک جاوید آفریدی نے ڈیرن سیمی کی پاکستان سے والہانہ محبت کے پیش نظر کی ہے۔

جاوید آفریدی نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا تھا کہ وہ پاکستان کی حکومت سے درخواست کرینگے کہ ڈیرن سیمی کی پاکستان سے والہانہ محبت کے پیش نظر انہیں پاکستان کی اعزازی شہریت دی جائے۔

واضح رہے کہ ڈیرن سیمی نے پاکستان سپر لیگ میں پشاور زلمی کی نمائندگی کی تھی اور وہ شائقین میں بے حد مقبول رہے تھے۔

جاوید آفریدی نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سپرلیگ ہمارے ملک میں بین الاقوامی کرکٹ کی واپسی میں اہم کردار ثابت ہوگی اور یہ تمام کھلاڑی خاص کر ڈیرن سیمی پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کے سلسلے میں مثبت سوچ رکھتے ہیں ۔

جاوید آفریدی نے ازراہ تفنن کہا کہ صرف چند ہفتے ان کے ساتھ گزارنے والے ڈیرن سیمی پشتو زبان بھی سیکھتے جارہے ہیں جو اچھی بات ہے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ جاوید آفریدی کی جانب سے ٹوئٹر پر ڈیرن سیمی کو پاکستان کی اعزازی شہریت دینے کی درخواست کے فوراً بعد خیبر پختون خوا کے وزیراعلی پرویز خٹک کے نام سے ایک ٹوئٹر اکاؤنٹ سے یہ پیغام دیا گیا کہ جاوید آفریدی کی درخواست پر کے پی کے کی حکومت ڈیرن سیمی کو اعزازی شہریت کی پیشکش کرتی ہے۔

بعد میں معلوم ہوا کہ یہ پرویز خٹک کا مستند ٹوئٹر اکاؤنٹ نہیں ہے تاہم اس کے جواب میں ڈیرن سیمی نے پشتو زبان میں پیغام دیتے ہوئے اس پیشکش کو قبول کرنے کا اعلان کیا۔

ڈیرن سیمی نے ایک اور پیغام میں لکھا ہے کہ پشتو بہت پیاری زبان ہے جو انہوں نےجاوید آفریدی سے سیکھی ہے۔

اسی بارے میں