فیفا کی پہلی خاتون سیکریٹری جنرل کی تعیناتی

تصویر کے کاپی رائٹ FIFA
Image caption 54 سالہ فاطمہ سمورا 21 برس سے اقوام متحدہ کے ساتھ منسلک ہیں

سینیگال سے تعلق رکھنے والی فاطمہ سمبا دیوف سمورا کو فٹ بال کی عالمی تنظیم فیفا کی پہلی خاتون سیکریٹری جنرل تعینات کیا گیا ہے۔

فیفا کے سابق سیکریٹری جنرل جیروم والکے پر فٹ بال سے منسلک سرگرمیوں پر 12 سالہ پابندی عائد کیے جانے کے بعد فاطمہ سمورا کو اس عہدے پر تعینات کیا گیا۔

54 سالہ فاطمہ سمورا 21 برس سے اقوام متحدہ کے ساتھ منسلک ہیں اور جون میں فیفا کی سیکریٹری جنرل کے طور پر اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گی۔

فیفا کے صدر گیانی انفاٹینو کہتے ہیں کہ ’اپنی تنظیم کی ازسر نو تعمیر اور بحالی کی کوششوں میں فیفا کے لیے اہم ہے کہ نئے نکتہ نظر شامل کیے جائیں۔

’انھوں نے ٹیم بنانے اور اس کی قیادت کرنے اور تنظیموں کی کارکردگی میں بہتری لانے میں اپنی قابلیت ثابت کی ہے۔ فیفا کی حوالے سے اہم امر یہ ہے کہ وہ سمجھتی ہیں کہ شفافیت اور احتساب کسی بھی ذمہ دار تنظیم میں مرکزی حیثیت رکھتے ہیں۔‘

فاطمہ سمورا کے عہدے کی توثیق سے قبل ان کی اہلیت کا ایک امتحان بھی ہوگا۔ وہ ابھی نائجیریا میں اقوام متحدہ کے ساتھ وابستہ ہیں اور چار انھیں چار زبانوں پر عبور حاصل ہے۔

فاطمہ سمورا نے سنہ 1995 میں روم سے ورلڈ فوڈ پروگرام کی سینیئر لاجسٹکس آفیسر کے طور پر اقوام متحدہ میں اپنے کیریئر کا آغاز کیا تھا اور نائجیریا سمیت چھ افریقی ممالک میں بطور ڈائریکٹر فرائض سرانجام دے چکی ہیں۔

ان کا کہنا ہے ’یہ میرا لیے ایک حیران کن دن ہے، اور میں اس عہدے کے لیے فخر محسوس کرتی ہوں۔‘

اسی بارے میں