’ایسا لگا جیسے میرے چہرے سے ٹرک ٹکرایا ہو‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مجھے صرف یہ یاد ہے کہ یہ ایسا تھا جیسے ٹرک کا چہرے سے ٹکرانا: جارج بیلی

انڈین پریمیئر لیگ کے ایک میچ میں آسٹریلین کھلاڑی جارج بیلی کے سر پر گیند لگی جس سے ان کا ہیلمٹ اڑ کر زمین پر جا گرا۔

جارج بیلی کا کہنا تھا کہ یہ ایسے تھا جیسے ٹرک ان کے چہرے سے ٹکرایا ہو۔

جارج بیلی انڈین پریمیئر لیگ میں رائزنگ پونے سپرجائنٹس کی ٹیم کی طرف سے کھیلتے ہیں۔

منگل کو کھیلے گئے میچ میں ایک گیند ان کے بلے سے ٹکرا کر ان کے ہیلمٹ سے ٹکرائی جس سے ہیلمٹ ٹوٹ کر ان کے سر سے اتر کر گرگیا۔

فرانسیسی خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق جارج بیلی نے نیتھن کولٹرنائل کی اس گیند کے بارے میں بتایا کہ ’جو ٹی وی پر دیکھ رہے تھے انھیں بہتر اندازہ ہوگا کہ کیا ہوا کیونکہ مجھے صرف یہ یاد ہے کہ یہ ایسا تھا جیسے ٹرک کا چہرے سے ٹکرانا۔‘

انھوں نے کہا کہ ’یہ سب کچھ تیزی سے ہوا۔ میں خاصا خوش بھی ہوں۔‘

جارج بیلی کہتے ہیں کہ ’ایک دو (کھلاڑیوں) کو مایوسی بھی ہوئی کہ ہیلمٹ گر کر وکٹ کو نہیں لگا لیکن زیادہ تر لوگ میں دیکھ رہے تھے کہ کیا میں ٹھیک ہوں۔‘

وشاکھاپنٹم میں دہلی ڈیئرڈیولز کے خلاف کھیلے گئے میچ میں پونے نے 19 رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔

خیال رہے کہ سنہ 2014 میں آسٹریلین کھلاڑی فلپ ہیوز کے ساتھ پیش آنے والے حادثے کے بعد ہیلمٹ کے معیار اور تحفظ کے حوالے سے خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔

فلپ ہیوز کو سڈنی کرکٹ گراؤنڈ میں ایک ڈومیسٹک میچ کے دوران سر کے پچھلے حصے میں گیند لگنے سے دماغ کو چوٹ لگی تھی جو ان کی ہلاکت کا باعث بنی۔

اسی بارے میں