’اینڈرسن کی بولنگ سب سے بڑا چیلنج‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption رمیز راجہ کے خیال میں اس سیریز میں یاسر شاہ کا کردار بہت اہم ہوگا

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان رمیز راجہ کے خیال میں انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کے لیے سب سے بڑا چیلنج جیمز اینڈرسن کی بولنگ ہوگی۔

واضح رہے کہ پاکستانی ٹیم چار ٹیسٹ، پانچ ون ڈے اور ایک ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کھیلنے کے لیے ہفتے کی شب انگلینڈ روانہ ہو رہی ہے۔

٭ دورۂ انگلینڈ کے لیے ٹیم کا اعلان، عامر کی مشروط شمولیت

٭ محمد عامر کو برطانیہ کا ویزا مل گیا

٭دورۂ انگلینڈ کے لیے کوچ کے بغیر تربیتی کیمپ شروع

انگلینڈ میں جاری سری لنکا کے خلاف تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں اینڈرسن نے 21 وکٹیں حاصل کی ہیں۔

رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ اینڈرسن کی سری لنکا کے خلاف شاندار بولنگ دیکھنے کے بعد یہی لگتا ہے کہ پاکستانی بیٹنگ بھی دباؤ میں رہے گی۔

پاکستانی بیٹسمینوں کو اینڈرسن کے خلاف موثر حکمت عملی بنانی ہوگی۔

رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ پاکستان کی بیٹنگ تکنیکی بنیادوں پر محدود ہے ایسی صورت میں بیٹسمینوں کو اپنی حکمت عملی اور سوچ کے ذریعے کچھ کرنا ہوگا۔

’آج کل کی کرکٹ میں رنز کی رفتار نہیں روکی جاتی۔ بیٹسمین سنگلز لیتے رہتے ہیں اور جہاں موقع ملتا ہے باؤنڈری لگادیتے ہیں۔ پاکستانی بیٹسمینوں کو دفاعی خول میں بند نہیں ہونا چاہیے اور اپنی مرضی سے کھیلنا ہوگا۔‘

رمیز راجہ نے اظہرعلی سے اوپننگ کرانے کی تجویز کے بارے میں کہا ’کم از کم سیریز کا آغاز ریگولر اوپنرز سے کیا جائے اور اگر وہ ناکام ہوجاتے ہیں تو پھر اظہر علی کی طرف دیکھنا چاہیے۔‘

رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ ٹیسٹ میچ جیتنے کے لیے رنز بہت ضروری ہیں۔اگر بیٹنگ چل گئی تو یہ بہت بڑا بونس ہوگا۔

رمیز راجہ کے خیال میں اس سیریز میں یاسر شاہ کا کردار بہت اہم ہوگا۔

رمیز راجہ نے سپاٹ فکسنگ میں سزا یافتہ فاسٹ بولر محمد عامر کے بارے میں کہا کہ اب جب کہ حکام یہ چاہتے ہیں کہ وہ کھیلیں تو منیجمنٹ کو ان سے بات کرنی ہوگی اور انھیں بتانا ہوگا کہ حالات کے لحاظ سے آپ کی کیا ذمہ داری بنتی ہے تاکہ ٹیم پر ان کی وجہ سے موجود دباؤ بٹ سکے۔

اسی بارے میں