روسی فٹبال شائقین تنظیم کے رہنما ملک بدر

تصویر کے کاپی رائٹ PA

فرانس میں جاری یورو 2016 کے انگلینڈ اور روس کے درمیان میچ میں شائقین کے درمیان جھڑپوں کے بعد فرانس نے روسی فٹ بال شائقین کی تنظیم کے انتہائی دائیں بازو کے رہنما کو ملک بدر کر دیا ہے۔

الیگزینڈر شپریگن اُن 20 روسی فٹ بال شائقین میں شامل ہیں جن کو فرانس نے ملک بدر کیا ہے۔

ان شائقین کو منگل کو اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ روس اور سلوواکیا کے درمیان میچ دیکھنے مارسیل سے لیل جا رہے تھے۔

ان شائقین کی حراست پر روس کے دفتر خارجہ نے ماسکو میں تعینات فرانسیسی سفیر کو طلب کیا اور ان حراستوں پر احتجاج کیا۔

الیگزینڈرآل رشیا سپورٹرز ینین کے سربراہ ہیں اور کریملن اس کی حمایت کرتی ہے۔ الیگزینڈرکے بارے میں اطلاعات ہیں کہ وہ انتہائی دائیں بازو کے خیالات رکھتے ہیں اور نازی سلیوٹ کرتے ہوئے ان کی تصاویر بھی موجود ہیں۔

واضح رہے کہ ہفتے کے روز میچ کے شروع ہونے سے پہلے اور بعد میں روس اور انگلینڈ کے شائقین کے درمیان جھڑپیں ہوئی تھیں۔

اسی بارے میں