شیروں کےساتھ سیلفی کیوں بنائی؟

تصویر کے کاپی رائٹ Prashant Dayal
Image caption جڈیجہ اپنے پیچھے شیروں کے جھنڈ کی جانب اشارہ کر رہے ہیں

انڈیا میں وائلڈ لائف حکام نے معروف کرکٹر رویندر جڈیجہ کے خلاف تفتش کا حکم دیا ہے۔

یہ حکم معدوم ہونے کے خطرے سے دو چار ایشیاٹک شیروں کے ساتھ انڈین کرکٹر روندر جڈیجہ اور ان کی اہلیہ کی تصاویر سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کے بعد دیا گيا ہے۔

ان تصاویر میں دونوں گجرات کے گیر نیشنل پارک میں پیدل سیر پر نظر آ رہے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ پارک کی سیر کرنے والوں کو اپنی گاڑیوں سے اترنے کی اجازت نہیں ہے اور ایسا کرنے پر انھیں جرمانہ ہو سکتا ہے۔

خیال رہے کہ 27 سالہ جڈیجہ حال میں ہونے والے ورلڈ ٹی 20 ٹورنامنٹ میں انڈین ٹیم کا حصہ تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Prashant Dayal
Image caption اپنی اہلیہ کے ساتھ شیر کو دیکھ رہے ہیں جبکہ پشت میں کئی شیر نظر آ رہے ہیں

انسٹا گرام کے اپنے اکاؤنٹ پرجڈیدجہ نے ایک تصویر پوسٹ کی جس کی پشت پر شیروں کا ایک جھنڈ تھا اور انھوں نے اس تصویر کے ساتھ لکھا تھا: ’فیملی فوٹو، سسان (گیر) میں اچھا وقت گزر رہا ہے rajputboy #wearelions#۔‘

ایک دوسری تصویر میں جڈیجہ اور ان کی اہلیہ ریوا نظر آ رہی ہیں جب کہ بیک گراؤنڈ میں ایک شیر نظر آ رہا ہے۔

گیر کا نیشنل پارک واحد پارک ہے جہاں ایشیاٹک شیر جنگل میں رہتے ہیں۔ افریقہ کے شیر سے قدرے چھوٹے اس جانور کو سنہ 2008 میں معدوم ہونے کے خطرے سے دوچار قرار دیا گيا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Prashant Dayal
Image caption جنگل کے حکام کے ساتھ جڈیجہ اور ان کی اہلیہ

چیف فارسٹ کنزرویٹر اے پی سنگھ نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا: ’چونکہ جنگل میں گاڑی سے اترنا منع ہے اس لیے ہم نے اس معاملے میں تفتش کا حکم دیا ہے۔‘

یہ تصاویر گجرات کے محکمۂ جنگلیات کے حکام کی جانب سے شیروں کے ساتھ سیلفی لینے کے خلاف انتباہ کے بعد پوسٹ کیے گئے ہیں۔

مسٹر سنگھ نے کہا کہ جڈیجہ کے معاملے میں اس بات پر غور کیا جائے گا کہ ان پر کیسا جرمانہ ہو۔

تصویر کے کاپی رائٹ Image copyrightRAVINDRA JADEJA INSTAGRAM

اسی بارے میں