یورو 2016: اٹلی اور آئس لینڈ کوارٹر فائنل میں پہنچ گئے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اٹلی کے جانب سے گول کرنے والے جارجیوگیلینی نے کہ ان کی ٹیم اس جیت کے حق دار تھے

فرانس میں جاری یورو کپ 2016 کے ناک آؤٹ مرحلے میں جہاں دفاعی چیمپیئن سپین اٹلی کے ہاتھوں شکست کے بعد ٹورنامنٹ سے باہر ہوگیا وہیں آئس لینڈ نے انگلینڈ کا یورو میں سفر تمام کر دیا۔

پری کوارٹر فائنل مرحلے میں پیر کو کھیلے جانے والے پہلے میچ میں اٹلی نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے سپین کو صفر کے مقابلے میں دو گول سے شکست دے دی۔

میچ میں اٹلی کی بہتر حکمت عملی اور پرُجوش کھیل کی وجہ سے سپین کو ایک گول کرنے کا بھی موقع نہیں دیا اور یوں دفاعی چیمپیئن کا سفر ناک آؤٹ مرحلے میں ختم ہوگیا۔

یہ 2006 کے ورلڈ کپ کے بعد پہلا موقع ہے کہ سپین کسی بڑے ٹورنامنٹ کے ناک آؤٹ مرحلے میں باہر ہوا ہے۔

اٹلی اور سپین کے مابین کھیلے جانے والے میچ میں 59 فیصد وقت گیند کا کنٹرول سپین کی ٹیم کے پاس رہا تاہم وہ گول نہ کر سکی۔

سپین نے اس دوران ٹارگٹ پر پانچ جبکہ اٹلی نے سات حملے کیے۔

اٹلی کے جانب سے گول کرنے والے جارجیو گیلینی نے کہا:’ہم اس جیت کے حق دار تھے، سپین کی کئی برسوں سے حکمرانی کا ہم کسی حد تک بدلہ لے سکے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption آئس لینڈ نے انگلینڈ کو ایک کے مقابلے میں دو گول سے شکست دی

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ’یہ صرف آغاز ہے اور ہم اپنی فتح سے لطف اندوز ہوں گے، لیکن اختتام تک جانے کے لیے ابھی طویل سفر باقی ہے اور بہترین ابھی آنے والا ہے۔‘

سپین کے کوچ نے کہا کہ:’وہ غالباً بہتر تھے، انھوں نے بہترین فٹبال نہیں کھیلی لیکن وہ ہوا میں زیادہ مضبوط تھے، جسمانی طور پر زیادہ بہتر اور خطرناک تھے۔ہمیں دوسرے ہاف میں گول کرنے کا موقع ملا تھا اور ہمارے کھلاڑیوں نے بہترین کرنے کی کوشش کی، ہم نے ہر چیز کرنے کی کوشش کی لیکن گول نہیں کر سکے۔‘

پیر کو کھیلے جانے والے دوسرے میچ میں آئس لینڈ نے انگلینڈ کو ایک کے مقابلے میں دو گول سے شکست دے دی۔

میچ میں رونی نے پنلٹی پر گول کر کے انگلینڈ کو برتری دلا دی تاہم یہ زیادہ دیر قائم نہیں رہی اور ریگنار کے خوبصورت گول سے آئس لینڈ نے میچ برابر کر دیا۔

میچ میں آئس لینڈ کی جانب دوسرا اور فیصلہ کن گول کولبن نے کیا۔ بظاہر یہ گول آسان تھا جس میں انگلینڈ کے گول کیپر گیند روکنے میں بری طرح ناکام ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption انگلینڈ کو شکست دینے والے آئس لینڈ کی اس وقت عالمی ریکنگ 34 ہے جبکہ آبادی صرف تین لاکھ تین ہزار ہے

آئس لینڈ کے ہاتھوں شرمناک شکست پر انگلینڈ کے مینیجر رائے ہوجسن مستعفی ہوگئے ہیں۔

اس سے پہلے کسی بڑے ٹورنامنٹ میں انگینڈ کو 1950 کے ورلڈ کپ کے ناک آؤٹ مرحلے میں امریکہ کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

انگلینڈ کو شکست دینے والے آئس لینڈ کی اس وقت عالمی ریکنگ 34 ہے جبکہ آبادی صرف تین لاکھ تین ہزار ہے۔

کوارٹر فائنل مرحلے میں اٹلی کا مقابلہ جرمنی سے جبکہ آئس لینڈ کا فرانس سے ہوگا۔

اسی بارے میں