اولڈ ٹریفرڈ: انگلینڈ کو 489 رنز کی برتری حاصل

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کپتان ایلسٹر کک نے فالو آن کے باوجود پاکستان کو دوبارہ کھیلنے کی دعوت دینے کے بجائے خود بیٹنگ کا فیصلہ کیا

پاکستان اور انگلینڈ کے مابین اولڈ ٹریفرڈ کے میدان پر کھیلے جارہے دوسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے اپنی دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 98 رنز بنا لیے تھے۔

اس طرح انگلینڈ کو 489 رنز کی مجموعی برتری حاصل ہو گئی ہے اور اس کی نو وکٹیں ابھی باقی ہیں۔

اتوار کو جب کھیل کا اختتام ہوا تو ایلسٹر کک اور جو روٹ کریز پر موجود تھے۔

٭ میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

٭ تیسرے روز کھیل کی تصویری جھلکیاں

٭ پاکستان چھ برس بعد انگلینڈ میں: خصوصی ضمیمہ

انگلینڈ کی جانب سے دوسری اننگز میں آؤٹ ہونے والے واحد کھلاڑی ایلکس ہیلز تھے جو 24 رنز بنا کر محمد عامر کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔

بارش کے باعث کھیل دو سے زائد بار تعطیل کا شکار ہوا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption مصباح الحق نے 52 رنز کی اننگز کھیلی

اس سے پہلے پاکستان کی پوری ٹیم پہلی اننگز 198 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی اور اس طرح انگلینڈ کو پاکستان پر 391 رنز کی بھاری برتری حاصل ہوگئی۔

کپتان ایلسٹر کک نے فالو آن کے باوجود پاکستان کو دوبارہ کھیلنے کی دعوت دینے کے بجائے خود بیٹنگ کا فیصلہ کیا ہے۔

اتوار کو پاکستان نے گذشتہ روز کے سکور چار وکٹوں کے نقصان پر 57 رنز کے ساتھ اپنی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو 71 کے مجموعی سکور پر شان مسعود 39 رنز بنا کر اینڈرسن کی گیند پر آؤٹ ہوگئے۔ اس کے بعد آنے والے اسد شفیق بھی زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور چار رنز بنا کر براڈ کا شکار بنے۔

سرفراز احمد 26 رنز بنا کر سٹوکس کی گیند پر سلپ میں روٹ کو کیچ دے گئے۔ یاسر شاہ بھی صرف ایک رن بنا سکے، انھیں ووکس نے آؤٹ کیا۔

کپتان مصباح الحق نے انگش بولرز کا پراعتماد انداز میں سامنا کرتے ہوئے 108 گیندوں پر اپنی نصف سینچری مکمل کی اور 52 کے انفرادی سکور پر معین علی کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔

انگلینڈ نے اپنی پہلی 589 رنز پر ڈیکلیئر کر دی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption تیسرے روز بارش کے باعث کھیل کچھ دیر کے لیے ملتوی کیا گیا تھا

جس کے جواب میں پاکستان نے اپنی اننگز کا آغاز محتاط انداز میں کیا تھا تاہم پاکستان کو پہلا نقصان 13ویں اوور میں ہوا جب محمد حفیظ 18 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ اظہر علی بھی صرف ایک رنز بنا کر کرس ووکس کو اپنی وکٹ تھما گئے۔

بین سٹوکس نے یونس خان کو وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ کرا کے انگلینڈ کی تیسرے کامیابی دلا دی۔نائٹ واچ راحت علی بھی زیادہ وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور کرس ووکس کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے۔

آخری آؤٹ ہونے والے بیٹسمین وہاب ریاض تھے جو 39 رنز بنا کر معین علی کی گیند پر آؤٹ ہوئے جبکہ محمد عامر نو رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

پہلی اننگز میں انگلینڈ کی جانب سے ووکس نے چار، معین علی اور سٹوکس نے دو، دو اور اینڈرسن اور براڈ نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کرس ووکس نے چار کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا

انگلینڈ کی جانب سے پہلی اننگز میں جو روٹ 254، کک 105، کرس ووکس 58، جونی بیرسٹو 58 اور بین سٹوکس 38 رنز کے ساتھ نمایاں بیٹسمین رہے تھے۔

پاکستان کی جانب سے وہاب ریاض سب سے کامیاب بولر رہے اور تین وکٹیں حاصل کیں۔

محمد عامر نے پاکستان کی جانب سے سب سے عمدہ بولنگ کی اور 29 اووروں میں 89 رنز دے کر دو وکٹیں حاصل کیں۔ لارڈز کےمیدان میں 10 وکٹیں حاصل کرنے والے یاسر شاہ اس اننگز میں زیادہ وکٹیں حاصل نہیں کر سکے اور54 اووروں میں 214 رنز کے عوض ایک وکٹ حاصل کی۔

اسی بارے میں