عالمی شہرت یافتہ کرکٹر لٹل ماسٹر حنیف محمد چل بسے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ان کی عمر 81 برس تھی اور وہ سرطان کے مرض میں مبتلا تھے

کراچی کے ایک نجی ہسپتال میں زیر علاج عالمی شہرت یافتہ پاکستانی کرکٹر اور قومی ٹیم کے سابق کپتان حنیف محمد انتقال کر گئے ہیں۔

ان کی عمر 81 برس تھی اور وہ سرطان کے مرض میں مبتلا تھے۔

حنیف محمد طویل عرصے سے بسترِ علالت پر تھے اور انھیں دو روز قبل وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا تھا۔

٭ حنیف محمد بجا طور پر میچ بچانے کی ڈھال تھے

٭ حنیف محمد کی یادگار تصاویر

آغا خان ہسپتال کے ترجمان نے بی بی سی کے نامہ نگار ریاض سہیل سہیل سے بات کرتے ہوئے ُان کے انتقال کی تصدیق کی ہے۔

اُن کے بیٹے شعیب محمد کا کہنا ہے کہ اُن کی نماز جنازہ کل بعد از نماز جمعہ ادا کی جائے گی۔

جمعرات کی صبح بھی ان کے انتقال کی خبر آئی تھی تاہم پھر اُن کے صاحبزادے شعیب محمد نے پی ٹی وی کو بتایا تھا کہ ان کے دل کی دھڑکن چند منٹ بند رہنے کے بعد بحال ہوگئی تھی۔

21 دسمبر 1934 کو انڈین ریاست جوناگڑھ میں پیدا ہونے والے حنیف محمد کے خاندان میں کئی افراد پاکستان کے لیے کرکٹ کھیل چکے ہیں۔

ان کے تین بھائی وزیر محمد، صادق محمد، رئیس محمد اور بیٹے شعیب محمد بھی ٹیسٹ کرکٹر رہ چکے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption حنیف محمد طویل عرصے سے بسترِ علالت پر تھے اور انھیں دو روز قبل وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا تھا

حنیف محمد نے 55 ٹیسٹ میچوں کی 97 اننگز میں 43.98 کی اوسط سے 3915 رنز بنائے، جن میں 12 سینچریاں اور 15 نصف سینچریاں شامل ہیں۔

ان کی سب سے بڑی وجہ شہرت ان کی وہ طولانی اننگز ہے جو انھوں نے برج ٹاؤن میں 58-1957 کی سیریز میں کھیلی تھی۔

990 منٹ پر محیط اس اننگز کا ریکارڈ آج بھی ٹیسٹ کرکٹ کی طویل ترین اننگز کے طور پر قائم ہے جس کے دوران انھوں نے 337 رنز بنائے تھے۔

اس کے علاوہ فرسٹ کلاس کرکٹ میں 499 رنز کا ریکارڈ ایک عرصے تک قائم رہا جسے برائن لارا نے توڑا۔

وہ ان کھلاڑیوں میں شامل ہیں جنھیں پاکستانی کرکٹ کا اولین سپر سٹار کہا جا سکتا ہے۔

اپنی بےعیب تکنیک اور ہر قسم کے حالات میں وکٹ پر لمبے عرصے تک ٹھہرے رہنے کی صلاحیت وہ خوبیاں ہیں جنھوں نے لاکھوں لوگوں کو حنیف کا گرویدہ بنا دیا۔

اسی بارے میں