BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Monday, 02 February, 2009, 11:13 GMT 16:13 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
’ کرکٹرز بھارت نہیں جا سکتے‘
 

 
 
 کرکٹر یاسر عرفات
لیگ سپنر دانش کنیریا بھی بھارت جانے والے افراد میں شامل تھے
پاکستانی دفترخارجہ نے پاکستانی کرکٹرز کو بھارت میں کھیلی جانے والی آئی پی ایل میں شرکت سے روک دیا ہے۔

اس سے قبل پانچ کرکٹرز کو بھارت جانے کی اجازت نہیں دی گئی تھی۔یہ پانچ کرکٹرز عاصم کمال دانش کنیریا۔ یاسرعرفات ۔ یاسرحمید اور محمد حفیظ چھ فروری کو گوا میں آئی پی ایل کی نیلامی میں شرکت کے لئے بھارت جانے والے تھے۔
وفاقی وزیر کھیل پیر آفتاب شاہ جیلانی کا کہنا ہے کہ دفترخارجہ نے انہیں مطلع کیا ہے کہ پاکستانی کرکٹرز کو موجودہ حالات میں بھارت جاکر کھیلنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی کیونکہ اس وقت وہاں ان کھلاڑیوں کی سلامتی کی ضمانت نہیں۔
واضح رہے کہ ممبئی دہشت گردی کے بعد بھارتی کرکٹ ٹیم نے پاکستان کا دورہ منسوخ کردیا تھا جبکہ بھارت میں کام کرنے والے پاکستانی فنکاروں کو بھی شدید ردعمل کے سبب وطن واپس آنا پڑا ہے۔
غور طلب بات یہ ہے کہ چند روز قبل ہی وزارت کھیل نے پاکستانی کرکٹرز کو بھارت جاکر آئی پی ایل کھیلنے کی اجازت دے دی تھی تاہم دفترخارجہ نے پیر کو ان کرکٹرز کو بھارت جانے سے روک دیا۔
پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف آپریٹنگ آفیسر سلیم الطاف نے کہا ہے کہ وزارت کھیل نے انہیں آئی پی ایل میں پاکستانی کرکٹرز کی شرکت نہ کرنے سے متعلق آگاہ کردیا ہے اور بی سی سی آئی کو اس سلسلے میں مطلع کردیا گیا ہے۔
گزشتہ سال آئی پی ایل میں پاکستان کے شاہد آفریدی۔ سلمان بٹ۔ شعیب اختر۔ محمد آصف۔ سہیل تنویر۔ یونس خان۔ محمد حفیظ۔ مصباح الحق۔ کامران اکمل۔ شعیب ملک اورعمرگل شریک ہوئے تھے۔
شاہد آفریدی سب سے زیادہ معاوضہ پونے ساتھ لاکھ ڈالرز وصول کرنے والے پاکستانی کرکٹرز تھے۔

-------

پاکستانی دفترخارجہ نے کسی بھی پاکستانی کرکٹر کو بھارت میں کھیلی جانے والی انڈین پریمیئر لیگ میں شرکت سے روک دیا ہے۔

اس سے قبل دفترِ خارجہ نے آئی پی ایل کی نیلامی میں شرکت کے لیے پانچ پاکستانی کرکٹرز کو بھارت جانے سے روک دیا تھا۔عاصم کمال، دانش کنیریا، یاسرعرفات، یاسر حمید اور محمد حفیظ آئی پی ایل کی نیلامی میں شرکت کے لیے بھارت جانے والے تھے۔

وفاقی وزیر کھیل پیر آفتاب شاہ جیلانی کا کہنا ہے کہ دفترخارجہ نے انہیں مطلع کیا ہے کہ پاکستانی کرکٹرز کو موجودہ حالات میں بھارت جا کر کھیلنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی کیونکہ اس وقت وہاں ان کھلاڑیوں کی سلامتی کی ضمانت نہیں۔

واضح رہے کہ ممبئی دہشتگردی کے بعد بھارتی کرکٹ ٹیم نے پاکستان کا دورہ منسوخ کر دیا تھا جبکہ بھارت میں کام کرنے والے پاکستانی فنکاروں کو بھی شدید ردعمل کے سبب وطن واپس آنا پڑا تھا۔

غور طلب بات یہ ہے کہ چند روز قبل ہی وزارت کھیل نے پاکستانی کرکٹرز کو بھارت جاکر آئی پی ایل کھیلنے کی اجازت دے دی تھی تاہم دفترخارجہ نے پیر کو ان کرکٹرز کو بھارت جانے سے روک دیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف آپریٹنگ آفیسر سلیم الطاف نے کہا ہے کہ وزارت کھیل نے انہیں آئی پی ایل میں پاکستانی کرکٹرز کی شرکت نہ کرنے سے متعلق آگاہ کر دیا ہے اور بی سی سی آئی کو اس سلسلے میں مطلع کر دیا گیا ہے۔

گزشتہ سال آئی پی ایل میں پاکستان کے شعیب اختر، محمد آصف، سہیل تنویر، یونس خان، محمد حفیظ، مصباح الحق، کامران اکمل، شعیب ملک اور عمرگل شریک ہوئے تھے اور شاہد آفریدی سب سے زیادہ معاوضہ وصول کرنے والے پاکستانی کرکٹرز تھے۔

 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد