BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Friday, 06 February, 2009, 09:14 GMT 14:14 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
چھ کا معاہدہ منسوخ ، چار کا معطل
 

 
 
فلنٹاف اور پیٹرسن
شعیب ملک نےگزشتہ برس دلی کی ٹیم کی نمائندگی کی تھی
انڈین پریمیئر لیگ نے پاکستان کے چھ کھلاڑیوں کے ساتھ کیےگئے معاہدے منسوخ کر دیے ہیں جبکہ چار دیگر پاکستانی کھلاڑیوں کے معاہدوں کو ایک برس کے لیے معطل کر دیا گیا ہے۔

جن کھلاڑیوں کے معاہدے منسوخ کیے گئے ہیں ان میں یونس خان، شعیب ملک، شعیب اختر، شاہد آفریدی، سلمان بٹ اور محمد حفیظ شامل ہیں جبکہ آئی پی ایل کی فرنچائز ٹیم راجستھان رائلز نے اپنے دو پاکستانی کھلاڑیوں سہیل تنویر اور کامران اکمل، کولکتہ نائٹ رائڈرز نے عمر گل اور بنگلور رائل چیلنجرز نے مصباح الحق کے معاہدے ایک برس کے لیے معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور وہ اگلے سال اس ٹورنامنٹ میں شریک ہو سکتے ہیں۔

آئی پی ایل کمشنر للت مودی نے گوا میں آئی پی ایل نیلامی کے بعد صحافیوں سے کہا کہ ’آئی پی ایل عالمی کرکٹ کے ضابطوں کی پیروی کرتی ہے اور اس کے مطابق کوئی بھی کھلاڑی معاہدہ کے بعد میچ میں کھیلنے سے انکار نہیں کر سکتا‘۔

سہیل تنویر نے گزشتہ برس راجھستان رائلز کو ٹائٹل جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ’پاکستانی کھلاڑی اس برس آئی پی ایل میں کھیلنے نہیں آ سکتے اس لیے ان کا معاہدہ ختم کیا جا رہا ہے اور اس لیے ان کی جگہ نئے کھلاڑیوں کو ٹیم میں جگہ دی جا سکتی ہے‘۔

خیال رہے کے حکومتِ پاکستان نے اپنے کھلاڑیوں کو ہندوستان جا کر کرکٹ کھیلنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے جس کے بعد یہ کھلاڑی آئی پی ایل کے 2009 سیزن میں شریک نہیں ہو سکیں گے۔

 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد