BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Tuesday, 10 March, 2009, 13:54 GMT 18:54 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
آئی پی ایل:تاریخیں ابھی طے نہیں
 

 
 
فائل فوٹو
آئی پی ایل نے کرکٹ کی کایہ پلٹ دی ہے
انڈین پریمیئر لیگ کے کمشنر للت مودی نے کہا ہے کہ میچ کی تاریخیں تبدیل کرنے میں اس لیے تاخیر ہوئی ہے کہ ابھی ایک ریاست سے میچ کی تاریخوں کی یقین دہانی نہیں مل سکی ہے۔

آئی پی ایل نے پچھلے ہفتے اعلان کیا تھا کہ یہ ٹورنامنٹ اپریل میں ہی ہوگا تاہم اس کی تاریخوں میں تبدیلی کی جائے گی تاکہ کسی جگہ میچ اور عام انتخابات کی پولنگ ایک روز نہ ہو۔

آئی پی ایل ٹورنامنٹ اپنی مقررہ تاریخ یعنی دس اپریل سے شروع ہوگا۔

ممبئی کے ایک مقامی ہوٹل میں اخباری کانفرنس میں مودی نے وضاحت کی کہ لوک سبھا کے الیکشن کی وجہ سے تواریخ میں تبدیلی کے لیے وہ ریاستوں سے رابطہ میں ہیں اور ریاستی حکمراں براہ راست مرکزی وزارت داخلہ سے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ سولہ مئی کو جس روز ووٹوں کی گنتی ہو گی اس روز کہیں بھی میچ نہیں ہوں گے۔ آئی پی ایل میچ دس اپریل سے چوبیس مئی تک جاری رہیں گے۔

مودی نے بتایا کہ احمدآباد، وشاکھا پٹنم ، دھرم شالہ اور ناگپور نئے علاقے ہوں گے جہاں میچ کھیلنے کے لیے ابھی گفتگو جاری ہے۔

مودی نے کہا کہ ممبئی حملوں کے پیش نظر گزشتہ برس کے مقابلے سے دس گنا زیادہ حفاظتی انتظامات سخت کیے گئے ہیں اس لیے بجٹ بھی بڑھ گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے کھلاڑیوں کی حفاظت کی ذمہ داری فرینچائز ٹیم پر تھی لیکن اس مرتبہ یہ ذمہ داری آئی پی ایل کی ہے۔

آئی پی ایل نے سکیورٹی کی ذمہ داری نکولس سٹین نامی سکیورٹی ایجنسی کو دی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ’غیر ملکی کھلاڑیوں کے ممبئی ایئر پورٹ پر اترنے سے ان کے اپنے وطن کے لیے روانہ ہونے تک ان کی ساری ذمہ داری ہماری ہو گیتاس میں مقامی پولیس، سیکوریٹی فورسیز بھی شامل ہوں گے۔‘

آئی پی ایل میچ کے ٹکٹوں کی فروخت آئندہ ہفتے سے شروع ہو گی۔ للت مودی نے کہا کہ شہر کے ملٹی پلیکس سنیما گھروں میں بھی میچ دکھائے جائیں گے اس کے لیے ٹینڈر طلب کیے گئے ہیں لیکن جس شہر میں میچ ہوگا اس شہر کے ملٹی پلیکس میں اس روز میچ نہیں دکھایا جائےگا۔

مودی نے کہا کہ تمام غیر ملکی کھلاڑی اس میچ میں شریک ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی کئی کھلاڑیوں سے بات ہوئی ہے اور انہوں نے کہا ہے کہ ان کے میچ میں شرکت کا فیصلہ ان کا بورڈ کرے گا۔

آئی پی ایل کے لیے اس برس سترہ نئے کھلاڑی نیلامی کے ذریعے خریدے گئے جن پر پندرہ ملین ڈالر خرچ ہوئے۔

آئی پی ایل کرکٹ کنٹرول بورڈ آف انڈیا کے ماتحت کام کرنے والی لیگ ہے۔ للت مودی اس کے کمشنر ہیں۔ یہ ایسی پہلی لیگ ہے جہاں کھلاڑیوں کو نیلامی کے ذریعہ خریدا جاتا ہے۔ سن دو ہزار آٹھ سے اس کی شروعات ہوئی۔ لیگ کا یہ دوسرا سال ہے اور اس سال اس میں کوئی بھی پاکستانی کھلاڑی شریک نہیں ہو رہا ہے۔ ان کی جگہ دوسرے کھلاڑیوں کو لیا گیا ہے لیکن راجستھان رائلز نے پاکستانی کھلاڑیوں کا معاہدہ منسوخ نہیں کیا ہے۔

 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد