تحریکِ طالبان پاکستان

  1. ملالہ، احسان اللہ احسان

    ٹوئٹر پر ایک دھمکی آمیز پیغام موصول ہونے کے بعد ملالہ یوسفزئی نے پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان اور فوج سے احسان اللہ احسان کے فرار ہونے سے متعلق سوال کیا ہے۔ تاہم وزیراعظم کے ڈیجیٹل میڈیا کے حوالے سے فوکل پرسن کا کہنا ہے کہ احسان اللہ احسان سے منسوب کیا جانے والا اکاؤنٹ جعلی ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  2. ریاض سہیل

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، کراچی

    بینظیر

    پاکستان پیپلز پارٹی کی چیئرپرسن بے نظیربھٹو امریکہ سے اپنی سکیورٹی اور بلٹ پروف جیکٹ چاہتی تھیں لیکن امریکی حکومت نے یہ کہہ کر یہ درخواست مسترد کردی کہ وہ صرف ملکی سربرہان کو سکیورٹی فراہم کرسکتے ہیں۔

    مزید پڑھیے
    next
  3. ریحان فضل

    بی بی سی ہندی، دہلی

    بے نظیر بھٹو

    26 دسمبر 2007 کی رات جب بے نظیر بھٹو ایک لانگ ڈرائیو کے بعد اسلام آباد پہنچیں تو وہ بہت تھک چکی تھیں لیکن آئی ایس آئی کے سربراہ میجر جنرل ندیم تاج کا پیغام ان تک پہنچا تھا کہ وہ ایک اہم کام کے لیے ان سے ملنا چاہتے ہیں۔ ندیم تاج نے انھیں بتایا کہ اس دن کوئی انھیں قتل کرنے کی کوشش کرے گا۔

    مزید پڑھیے
    next
  4. خدائے نور ناصر

    بی بی سی، اسلام آباد

    عمران خان

    افغانستان پاکستان پر افغان طالبان کی حمایت کا الزام لگاتا ہیں جبکہ پاکستان، تحریک طالبان کے تمام حملوں کی ذمہ داری افغانستان پر ڈالتے ہیں اور کہتے ہیں کہ انڈیا پاکستانی طالبان اور بلوچ عسکریت پسندوں کے ذریعے پاکستان کے خلاف افغان سرزمین استعمال کر رہا ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  5. شہزاد ملک

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، اسلام آباد

    اے پی ایس

    2014 میں آرمی پبلک سکول پشاور پر ہونے والے حملے کے بارے میں حقائق معلوم کرنے کے لیے تشکیل پانے والے عدالتی کمیشن نے اپنی رپورٹ میں اس واقعے کو سکیورٹی کی ناکامی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ اس واقعے نے ہمارے سکیورٹی نظام پر سوالیہ نشان لگا دیا ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  6. عزیز اللہ خان

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، پشاور

    جماعت الاحرار (فائل فوٹو)

    کالعدم تنظیم تحریک طالبان پاکستان اندرونی اختلافات کی وجہ سے دھڑے بندی کا شکار ہو گئی تھی لیکن اب ایک مرتبہ پھر یہ تنظیم یکجا ہونے جا رہی ہے اور پیر کو باقاعدہ طور پر جماعت الاحرار اور حزب الاحرار نے تحریک میں ضم ہونے کا اعلان کر دیا ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  7. عزیزالله خان

    بي بي سي

    اپنی کتاب میں مفتی نور ولی نے اعتراف کیا تھا کہ طالبان گروہ اور تنظیمیں ماضی میں اپنے اخراجات پورے کرنے کے لیے تحریک ہی کی چھتری تلے ڈاکہ زنی، بھتہ خوری، اجرتی قتال جیسی کارروائیوں میں ملوث رہیں۔

    اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے کالعدم تنظیم تحریک طالبان کے موجودہ سربراہ مفتی نور ولی محسود کو شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ اور القاعدہ کی پابندیوں کی فہرست میں شامل کر دیا ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  8. عزیز اللہ خان

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، پشاور

    شمالی وزیرستان میں پاکستانی فوجی

    سرحد کی دونوں جانب بڑھتے ہوئے ان واقعات میں کیا کوئی تعلق ہے یا دونوں ممالک میں پیش آنے والے یہ واقعات اپنے اپنے علاقوں کے حالات کے مطابق پیش آ رہے ہیں؟

    مزید پڑھیے
    next
  9. عبد السید

    محقق، سویڈن

    حکیم اللہ محسود

    کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے ایک دستاویزی فلم امریکہ کے افغان امن معاہدے کو ’جہادیوں کی فتح‘ قرار دیا لیکن اس میں زیادہ تر تنظیم کے سابق امیرحکیم اللہ محسود کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔

    مزید پڑھیے
    next
  10. عزیز اللہ خان

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، پشاور

    شدت پسند

    شمالی وزیرستان میں اس مہینے میں اب تک سکیورٹی فورسز اور شدت پسندوں میں جھڑپوں کے چار واقعات پیش آئے، جن کے بعد یہ سوال اٹھایا جا رہا ہے کہ آیا یہ معمول کی کارروائیاں ہیں یا شدت پسند قبائلی علاقوں میں دوبارہ اکٹھے ہو رہے ہیں۔

    مزید پڑھیے
    next