نوبیل انعام

  1. آمنہ مفتی

    مصنفہ و کالم نگار

    اڑیں گے پرزے

    اردو کے نثر نگار، خاص کر ہمارے ہم عصر ناول نگار، باقی دنیا کی طرح نہیں لکھتے۔ ہم ناول ایسے لکھتے ہیں جیسے مزاروں پہ مست لوگ قوالی کی دھن پہ حال کھیلتے ہیں۔ پڑھیے آمنہ مفتی کا کالم

    مزید پڑھیے
    next
  2. جیمز گلیگھر

    ہیلتھ اینڈ سائنس کارسپانڈنٹ

    لمس

    امریکی سائنسدان ڈیوڈ جولیس اور آرڈم پیٹاپاؤشین 2021 کا انعام فزیولوجی یا میڈیسن کے لیے شئیر کریں گے۔

    مزید پڑھیے
    next
  3. Rhino

    ذرا سوچیے، ایک بھاری بھرکم گینڈا ہوا میں الٹا لٹکا ہوا کیسا لگے گا؟ یہ انداز یقیناً اس کے لیے فطری نہیں ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  4. ریحان فضل

    بی بی سی ہندی، دہلی

    مدر ٹریسا

    مدر ٹریسا کا خیال تھا کہ انسان کو گناہ سے نفرت کرنی چاہیے نہ کہ گنہگار سے۔ 'وہ ہر سنجیدہ صورت حال کو ہلکے انداز میں لیتی تھیں۔ جب وہ کسی سسٹر کی تقرری کرتیں تو ایک شرط یہ بھی تھی کہ اس میں مزاح کی حس ہونی چاہیے۔ وہ ہمیشہ لطیفے سناتیں۔ جب کوئی چیز بہت مزاحیہ ہوتی تو وہ کمر پر ہاتھ رکھ کر ہنستے ہنستے دوہری ہو جاتیں۔'

    مزید پڑھیے
    next
  5. آمنہ مفتی

    مصنفہ و کالم نگار

    شادی، ملالہ

    کسی محفل میں سلیمانی ٹوپی اوڑھ کے بیٹھ جائیں اور مردانہ زنانہ گفتگو الگ الگ سنیں تو معلوم ہو گا کہ شادی سے جڑے رومانوی تصورات پہ یقین صرف وہی کرتے ہیں جن کی شادی نہیں ہوئی ہوتی۔ آمنہ مفتی کا کالم

    مزید پڑھیے
    next
  6. عمردراز ننگیانہ

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام

    ڈاکٹر عبدالسلام

    پروفیسر پرویز ہود بھائی کے مطابق ڈاکٹر سلام کے نظریے نے جن نتائج کو جنم دیا ان میں ایک انتہائی اہم یہ تھا کہ انھوں نے اس بات کی پیشن گوئی کی کہ ’کچھ ایسے ذرے ہیں جو بنیادی اہمیت رکھتے ہیں لیکن وہ اس وقت تک دیکھے نہیں گئے تھے۔‘

    مزید پڑھیے
    next
  7. جیمز گیلیگر

    صحت کے نامہ نگار

    ہیپاٹائٹس سی کا وائرس دریافت کرنے والے سائنسدانوں کے لیے نوبیل انعام

    1960 کی دہائی میں خون عطیہ کرنے کے حوالے سے کئی خدشات سامنے آئے تھے کیونکہ کئی ایسے لوگ جنھیں خون کا عطیہ ملا، ہیپاٹائٹس کے مرض میں مبتلا ہو رہے تھے۔ نوبیل انعامی کمیٹی کے مطابق اُس وقت خون کا عطیہ ’اپنی زندگی سے کھیلنے‘ کے مانند ہوتا تھا۔

    مزید پڑھیے
    next
  8. پاکستانی ہائی کمیشن نئی دہلی

    اس سال ’امن کا نوبل انعام‘ انڈیا اور پاکستان کی حکومتوں کو دیا گیا کیونکہ ان کے سفارت کار آدھی رات کو ایک دوسرے کی گھنٹیاں بجا کر دروازہ کھلنے سے پہلے ہی بھاگ جاتے تھے۔

    مزید پڑھیے
    next
  9. Donald Trump

    ناروے کے ایک انتہائی دائیں بازو کے سیاستدان نے صدر ٹرمپ کا نام 2021 میں امن کے نوبیل انعام کے لیے بھیجا ہے اور انھوں نے اس کی وجہ صدر ٹرمپ کا حال ہی میں متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کی بحالی میں کردار بتائی ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  10. لسیپریا کُنجُم

    انڈیا میں ماحولیاتی تبدیلی کے خلاف آواز بلند کرنے والی آٹھ سالہ لسی پریا کُنجُم نے ٹوئٹ کر کے کہا ہے کہ سیاسی مفادات کے لیے ان کا استعمال نہ کیا جائے۔

    مزید پڑھیے
    next