فنِ تعمیر

  1. کارلوس سیرانو

    بی بی سی منڈو

    نائن الیون حملے

    20 سال قبل دو بوئنگ 767 طیارے نیویارک میں ورلڈ ٹریڈ سینٹر کے جڑواں ٹاورز سے ٹکرائے تھے مگر ماہرین کے مطابق ان عمارتوں کے زمین بوس ہونے کی سائنسی وجوہات کیا ہیں۔

    مزید پڑھیے
    next
  2. سحر بلوچ

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، حیدرآباد

    دھرم

    مُکھی ہاؤس سنہ 1920 میں ایک بااثر سندھی ہندو خاندان کے سربراہ مکھی پریتم داس کے بیٹے مُکھی جیٹھ آنند نے تعمیر کروایا تھا۔ مُکھی خاندان اس محل نما گھر میں 26 سال رہا اور پھر برِصغیر کی تقسیم کے بعد مُکھی خاندان کے افراد نے ایک ایک کر کے یہاں سے ہجرت کی۔

    مزید پڑھیے
    next
  3. مجسمہ آزادی

    یہ بات تو سب ہی جانتے ہیں کہ یہ مجسمہ فرانس نے امریکہ کو تحفے میں دیا تھا مگر کیا آپ یہ جانتے ہیں کہ مجسمہ ساز نے اصل میں یہ مصر کے لیے بنانا چاہا تھا؟

    مزید پڑھیے
    next
  4. تقسیم سکوائر کی مسجد

    ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے استنبول کے تقسیم سکوائر میں اس مسجد کا افتتاح کیا ہے جس کے منصوبے کے سامنے آنے کے بعد سنہ 2013 میں ملک میں بڑے پیمانے پر مظاہرے کیے گئے تھے۔

    مزید پڑھیے
    next
  5. گیتا پانڈے

    بی بی سی نیوز، دہلی

    مودی

    انڈین دارالحکومت نئی دہلی کے قلب میں واقع راج پتھ (جو پہلے کنگز ایوینیو کہلاتا تھا) دہلی والوں کے لیے ویسا ہی ہے جیسے نیویارک والوں کے لیے سینٹرل پارک یا پیرس والوں کے لیے شانزے لیزے ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  6. عقیل عباس جعفری

    محقق و مورخ، کراچی

    فیصل مسجد

    1960 کی دہائی میں حکومت نے فیصلہ کیا کہ اس نئے دارالحکومت میں مارگلہ کی پہاڑیوں کے دامن میں ایک ایسی مسجد تعمیر کی جائے جو نہ صرف اسلام آباد کے بلند ترین مقام پر تعمیر ہونے کے باعث پورے اسلام آباد کا مرکز نگاہ ہو بلکہ پاکستان کی شناخت بھی بن جائے۔

    مزید پڑھیے
    next
  7. Sketch of the rebuilt mosque

    ایک مصری معمار گروپ نے نام نہاد دولت اسلامیہ کے عسکریت پسندوں کے ہاتھوں تباہ ہونے کے چار سال بعد موصل کی عظیم مسجد النوری کی تشکیل نو کے لیے ایک مقابلہ جیت لیا ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  8. عقیل عباس جعفری

    محقق و مورخ، کراچی

    لاہور کا عجائب گھر

    لاہور کے مال روڈ کی بیشتر عمارات لاہور ہائی کورٹ، جی پی او، عجائب گھر، نیشنل کالج آف آرٹس، کیتھڈرل سکول، ایچی سن کالج، دیال سنگھ مینشن اور گنگا رام ٹرسٹ بلڈنگ انھی سر گنگا رام کی بنوائی ہوئی ہیں۔ لیکن جس نے منٹو کا افسانہ نہیں پڑھا، اس کے لیے گنگا رام ایک اجنبی نام ہو سکتا ہے۔

    مزید پڑھیے
    next
  9. شکیل اختر

    بی بی سی اردو، دہلی

    قطب مینار

    انڈیا کے دارالحکومت دلی میں واقع آٹھ سو برس قدیم قطب مینار اور اس کے اطراف کی عمارتیں عالمی میراث میں شامل ہیں اور ہندو انتہا پسندوں کا دعویٰ ہے کہ یہ مندروں کی جگہ تعمیر کی گئی ہیں اور یہاں ہندوؤں کو پوجا کی اجازت دی جانی چاہیے۔

    مزید پڑھیے
    next
  10. شبینہ فراز

    صحافی

    جام نظام الدین کا مقبرہ

    ٹھٹھہ کے قریب مکلی کے قبرستان میں موجود قبروں کی تعداد 10 لاکھ بتائی جاتی ہے جبکہ یہاں 20 کے قریب بڑے مقبرے موجود ہیں جو مغل حکمرانوں کے ادوار اور تعمیراتی حسن کو بیان کرتے ہیں۔ اس قبرستان میں موجود قبروں کی قدامت 500 سال تک بتائی جاتی ہے۔

    مزید پڑھیے
    next