روسی فوجی پریڈ، جدید ترین ہتھیاروں کی نمائش

تصویر کے کاپی رائٹ bbc
Image caption پریڈ میں جدید T 14 ٹینکوں نے بھی حصہ لیا

دوسری جنگ عظیم میں نازی جرمنی کے خلاف روس کی فتح کی 71ویں سالگرہ کے موقع پر ماسکو کے مرکز میں روسی مسلح افواج کے دستوں کی پریڈ ہوئی۔

اس فوجی پریڈ میں روسی فوج کے تمام شعبوں نے شرکت کی اور روس کے جدید ترین ’ملٹری ہارڈیور‘ کی نمائش کی گئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

روسی فوج کے جن جدید ترین ہتھیاروں کی اس پریڈ میں نمائش کی گئی ان میں ’آر ایس 24 یار‘ میزائل شامل تھے جو طویل فاصلوں پر مار کر سکتے ہیں اور ان میں جوہری ہتھیاروں کو لیے جانے کی صلاحیت بھی موجود ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

لڑاکا طیارے، بمباری طیارے اور ہیلی کاپٹروں نے ماسکو کے ریڈ سکوائر کے اوپر پروازیں کیں۔ ان طیاروں میں وہ بھی شامل تھے جنہیں حال ہی میں شام میں استعمال کیا گیا جہاں روس کی فوج شامی حکومت کی مدد کر رہی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

اس پریڈ میں روس میں حال ہی میں قائم کی گئی نئی فورس نیشنل گارڈ کے دستے بھی شریک تھے۔

نیشنل گارڈ جدید ہتھیاروں سے لیس ہو ں گے اور ان کے فرائض میں دہشت گردوں اور منظم جرائم کے خلاف کارروئی کرنا شامل ہوگا۔

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

اس پریڈ میں دس ہزار فوجی، 135 بکتر بند گاڑیاں اور 71 طیارے بھی شامل تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

پریڈ کے دوران ملی نغمے بھی چلائے جا رہے تھے۔ خیال رہے کہ نیٹو سے یوکرائن کے معاملے پر بڑھتی ہوئی کشیدگی کے تناظر میں روس اپنی فوج کو جدید طرز پر تیار کرنے کے لیے اربوں ڈالر خرچ کر رہا ہے۔

پریڈ روس کے لیے بین الاقوامی دنیا کو اپنی فوجی طاقت دیکھانے کا ایک ذریعہ بھی ہے۔

اسی بارے میں